Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, March 16, 2019

پوروانچل یونیورسٹی میں " اکیسویں صدی میں انسانی وسائل اور چیلنجیز " کے عنوان کے تحت سیمینار کا انعقاد۔

جون پور ۔۔۔اتر پردیش۔(نمائندہ)۔
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . 
ویر بہادر سنگھ پوروانچل یونیورسٹی کے انسانی وسائل ترقی شعبے کی جانب سے ہفتہ کے روز21 ویں صدی میں انسانی وسائل کے انتظام کے سامنے چیلنجز موضوعاتی سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔
سیمینار میں بطور مہمان خصوصی پرنسپل سکریٹری ہاؤسنگ اور یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر نتن رمیش گوکرن نے کہا کہ معیشت میں ہو رہے تبدیلی کی وجہ منیجنگ عمل میں بھی تبدیلی آئی ہے۔ تبدیلی کے اس دور میں انسانی وسائل مینیجر چیلنجز کا سامنا کرتے ہوئے بہتر طریقے سے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے مجموعی گھریلو پیداوار، آبادی کافائدہ، ہندوستان کی نوجوان نسل اور تکنیکی ترقی کے نقطہ نظر میں انسانی ترقی مینیجنگ کو تیار کرنے پر زور دیا۔ مسٹر گوکرن نے اتر پردیش اور ملک میں ہو رہے اقتصادی تبدیلی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آج ملک کے بنیادی ڈھانچے میں تیزی سے ترقی ہو رہا ہے اس کا مثبت اثر صنعتوں اور دیگر علاقے پر بھی پڑا ہے۔ دون یونیورسٹی اسکول آف مینجمنٹ کے پروفیسر ایچ سی پروہت نے کہا کہ 21 ویں صدی میں چیلنجوں کا سامنا کرنے کے لئے ذہانت، عقل مندی کے ساتھ ساتھ روحانی طور پر مضبوط ہونے کی ضرورت ہے۔ مینیجر کو پیشہ ورانہ مہارت کے ساتھ کام مقام پر آسان کاموں کو بھی پروفیشنل مہارت کے ساتھ کام کرنا چاہئے۔ انہوں نے صنعت میں موجودہ وقت اپنائی جا رہی انسانی وسائل پالیسیوں اور منصوبوں کو مثال کے ذریعے پیش کرتے ہوئے طالب علموں کو صحیح سمت میں اپنا تعاون دینے کی اپیل کیا۔اس سے قبل شعبہ کے چیئرمین پروفیسر اویناش پاتھرڈکر نے مہمانوں کا استقبال کیا۔اس موقع پر پروفیسر اجے دویدی، پروفیسر بی ڈی شرما، ڈاکٹر مراد علی، ڈاکٹر منوج مشرا، ڈاکٹر سچن اگروال، ڈاکٹر آشوتوش سنگھ، ڈاکٹر کملیش پال، انجلی موریا سمیت دیگر اساتذہ اور طالب علم موجود رہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot