Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, March 15, 2019

علی گڑھ۔۔۔۔اے ایم یو کے قریب اعظم گڑھ کی بی یو ایم ایس طالبہ کو گولی ماری گئی۔

ایک ماہ کے اندر مسلم یونیورسٹی کے قریب تیسرا گولی کانڈ۔
علیگڑھ۔۔اتر پردیش/ صدائے وقت ذرائع۔
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . 
پولیس افسران کی تمام تر سختیوں و نظم ونسق کے دعوں کے باوجود علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کے قریب(کیمپس سے باہر) گولی کانڈ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔تازہ ترین خبروں کے مطابق گزشتہ جمعرات کو ایک بی یو ایم ایس کی طالبہ علیگڑھ پبلک اسکول کے پیچھے انوار ہدیٰ اپارٹمنٹ کے سامنے اپنی اسکوٹی سے پہنچی تو تین اسلحہ بردار بدمعاشوں نے اسے جبراً بائک لگا کر روک کر اس کا پرس چھیننے کی کوشش کرنے لگے۔لڑکی کے مخالفت کرنے پر بدمعاشوں نے اس پر تین راونڈ فائرنگ کر دی ۔ایک گولی اس کے کندھے   سے ہوتی ہوئی سینے میں جا لگی۔باقی گولیاں  ہوا میں نکل گئی۔ پرس چھیننے میں ناکام بدمعاشوں نے گولی مارکر راہ فرار اختیار کیا۔طالبہ کو میڈیکل کالج میں بھرتی کرایا گیا جہاں وہ زیر علاج ہے۔
طالبہ اعظم گڑھ کے موضع چاند پٹی کے رہنے والے اے ایم یو کے سابق طالب علم محمد عامر کی بیوی کے طور پر ہوئی جو اے سی این میڈیکل کالج میں ( یونیورسٹی کالج نہیں ہے)۔بی یو ایم ایس تھرڈ ایئر کی طالب علم ہے۔اور سرسید نگر میں اپنے شوہر کے ساتھ رہتی ہے۔
غور طلب ہے کہ اس سے قبل ایک ماہ کے اندر اے ایم یو کیمپس کے قریب جامعہ کے ہیچھے دو گولی کانڈ کے واقعات ہو چکے ہیں۔

Post Top Ad

Your Ad Spot