Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, February 29, 2020

متھرا ضلع جیل میں ڈاکٹر کفیل کی جان کو خطرہ ۔۔اہلیہ شبستا ں خان نے عدلیہ و انتظامیہ کو بھیجی تحریر۔۔مناسب حفاظتی بندوبست کا کیا مطالبہ ۔

لکھنٶ۔۔اتر پردیش /صداٸے وقت۔/ذراٸع /٢٩ فروری ٢٠٢٠۔
=============================
این ایس اے کے تحت متھرا ضلع جیل میں قید ڈاکٹر کفیل خان کی اہلیہ ڈاکٹر شبستاں خان نے گزشتہ بدھ کو جیل میں ڈاکٹر کفیل سے ملاقات کی۔۔۔ڈاکٹر شبستاں خان کے مطابق ان کے شوہر نے انھیں بتایا کہ ان کو جیل میں جان کا خطرہ ہے۔۔جیل انتظامیہ پر الزام عاٸد کرتے ہوٸے انھوں نے کہا کہ ان کے ساتھ غیر انسانی سلوک کیا جارہا ہے ۔انھیں ذہنی طور پر اذیت دی جارہی ہے اور ان کو کبھی کبھی بھی قتل کرایا جاسکتا ہے۔
اس سلسلے میں ڈاکٹر شبستاں خان نے چیف جسٹس الہٰ آباد ہاٸی کورٹ ، چیف سکریٹری حکومت اتر پردیش ، ڈی جی جیل اتر پردیش و دیگر حکام کو تحریر دے کر مطالبہ کیا ہے کہ میرے شوہر کی جان کو جیل کے اندر خطرہ لاحق ہے اور ان کی سلامتی کا مناسب بندوبست ہونا چاہٸے۔
: ڈاکٹر شبستاں خان نے تحریر کیا ہے کہ ان کے شوہر کو مورخہ ١٣ فروری سے ایک جھوٹے مقدمہ و غیر قانونی طور پر این ایس اے لگا کر جیل میں رکھا گیا ہے۔ان کے ساتھ غیر انسانی سلوک کیا جارہا ہے۔۔ان کی جان کو شدید خطرہ لاحق ہے۔۔ان کو خوفناک اذیت دی جارہی ہے۔۔۔انھوں نے عدلیہ و انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے شوہر کی حفاظت کا مناسب بندوبست کیا جاٸے اور انھیں عام قیدیوں کے ساتھ رکھا جاٸے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot