Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Tuesday, March 31, 2020

تبلیغی جماعت ۔۔۔میڈیا۔۔۔۔اور سیاست کا نفرت انگیز پروپگنڈہ۔



 آج شام 7 بجے سے، کاروان امن و انصاف CPJ کی سوشل میڈیا یونٹ، جماعت اسلامی کی SiO اور یونائیٹڈ اگینسٹ ہیٹ UAH متحدہ طورپر میڈیا اور حکومت کے سیاسی پروپیگنڈے کے خلاف سوشل میڈیا پر حقائق کے لیے بیداری کی مہم چلائیں گے 

از/ سمیع اللہ خان /صداٸے وقت /٣١ مارچ ٢٠٢٠۔
==============================
 حکومت نے اچانک لاک ڈاؤن کرکے سب کو پریشانی میں ڈال دیا، بعدازاں حکومت نے ہی اعلان کیا کہ جو جہاں ہے وہیں رک جائے 
تبلیغی جماعت کی اصلاحی تحریک کا عالمی سینٹر مرکز نظام الدین ہے، ایسے میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے وہاں پر موجود تبلیغی جماعت کے لوگ اچانک پھنس گئے 
 تبلیغی جماعت کے ذمہ داروں نے امانت داری اور حکومت سے تعاون کا ثبوت دیتے ہوئے نظام الدین کی طرف سے دہلی حکومت اور ایڈمنسٹریشن کو خط بھی لکھا اور اپیل بھی کی، کہ، ان کے مرکز میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے لوگ پھنس گئے ہیں انہیں منتقل کرنے کا کوئی نظم کریں، لیکن حکومت نے کچھ نہیں کیا اور مرکز میں لوگوں کو پھنسے رہنے دیا
 پھر جب لاکھوں مزدور دہلی کی سڑکوں پر اتر گئے، غلط لاک ڈاؤن کی وجہ مرکزی اور دہلی کی صوبائی کیجریوال گورنمنٹ کی ناکامیاں میڈیا میں چھاگئی چاروں طرف سے تھو تھو ہونے لگی، تو چالاکی سے حکومت نے مرکز پر میڈیا کے ساتھ دھاوا بول دیا اور مزدوروں، غریبوں کا ایشو دبا کر ہندو مسلم کارڈ کھیلنا شروع کردیاہے، اور اب بدترین سیاست کرتے ہوئے کرونا کے نام پر میڈیا کے ذریعے گھٹیا متعصبانہ سیاست کھیل رہے ہیں اصل زمینی انسانی بحران سے توجه ہٹانے کے لیے تبلیغی جماعت اور مرکز نظام الدین کے نام پر کرونا کو مسلمانوں کے خلاف بھڑکانے کے لیے استعمال کررہےہیں، اور اب ملک گیر پیمانے پر تبلیغی جماعت کےخلاف سرکاری پابندی کا مطالبہ ہورہاہے، 
 یہ ہے پوری سیاسی پینترے بازی جو ہوم منسٹری اور کیجریوال گورنمنٹ اس وقت کھیل رہےہیں 

 اس پروپیگنڈے کو توڑنا بہت ضروری ہے، سچائی سب کے سامنے لانے کے لیے سوشل میڈیا ہے، اس کے ذریعے حکومتوں کی گھٹیا سیاست کو ایکسپوز کرنا ضروری ہے، 
اس کے لیے آج شام سے، کاروان CPJ, UAH, اور SiO کی جانب سے سات بجے سے ٹوئٹر ٹرینڈ چلے گا جس میں آپکو دو کام کرنے ہیں  
سب سے پہلے تبلیغی جماعت کے سپورٹ اور دہلی گورنمنٹ و مرکزی سرکار کے متعصب رویے کے خلاف ٹوئیٹ کریں جن کی لاپرواہ ناکامیوں کا ٹھیکرا مرکز نظام الدین کے نام پر مسلمانوں کے سر تھوپا جارہا ہے
ان ٹوئیٹ میں یہ دو ہیش ٹیگ استعمال کریں 
#PMDoesNotCare
#KejriwalExposed 

 ان دونوں ہیش ٹیگ کے ساتھ ہمیں آج رات تک میڈیا کے نفرت انگیز پروپیگنڈے کی حقیقت عام کرنا ہے، اور انصاف پسندوں تک حقائق پہنچا کر انہیں اس گھٹیا سیاسی پروپیگنڈے کے خلاف لکھنے بولنے کے لیے کھڑا، کرنا ہے_
شام سات بجے سے: ہیش ٹیگ یاد رہے، صوبائی دہلی اور مرکزی سرکار کے خلاف یہ دو ہیش ٹیگ 
#PMDoesNotCare 
#KejriwalExposed

نیز دوسرا کام ملک بھر میں جہاں بھی مسلمان لاک ڈاؤن کی وجہ سے ستائے ہوئے غریبوں کی مدد کررہےہیں اور کرونا کےخلاف لڑنے میں مدد دے رہےہیں ان کی تصاویر اس جگہ کے نام کے ساتھ درج ذیل ہیش ٹیگ لگا کر ٹوئیٹ کریں
#AntiCorona_ProCountry

*سمیع الله خان*
۳۱ مارچ بروزمنگل ۲۰۲۰ 
جنرل سیکریٹری: کاروانِ امن و انصاف

Post Top Ad

Your Ad Spot