Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, June 15, 2020

علیگڑھ ‏مسلم ‏یونیورسٹی ‏کی ‏درجہ ‏بندی ‏میں ‏پوزیشن ‏گری۔۔این ‏آٸی ‏آر ‏ایف ‏کے ‏اعداد ‏وشمار ‏میں ‏غلطی ‏۔۔۔واٸس ‏چانسلر ‏نے ‏مرکزی ‏حکومت ‏کو ‏لکھا ‏خط۔


 علی گڑھ ،/صداٸے وقت /ذراٸع / 15 جون 2020.
==============================
   علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے چانسلر نے مرکزی حکومت کو ایک خط لکھ کر اس غلطی کو دور کرنے کی کوشش کی ہے جس کی وجہ سے یونیورسٹی کی درجہ بندی میں کمی واقع ہوئی ہے۔  اے ایم یو کے ایک ترجمان نے پیر کے روز بتایا کہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے ہفتہ کے روز مرکزی انسانی وسائل کی ترقی کے وزیر رمیش پوکڑیال 'نشانک' کو لکھے گئے خط میں ان سے اپیل کی ہے کہ قومی ادارہ جاتی درجہ بندی کے فریم ورک (این آئی آر ایف) کے اعداد و شمار میں  جو غلطی کی گٸی ہے  اسے درست کروائیں

 وائس چانسلر نے مرکزی وزیر کی توجہ پی ایچ ڈی نتائج کے معاملے میں ہونے والی سنگین بے ضابطگیوں کی طرف مبذول کرائی ، یہی وجہ ہے کہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی این آئی آر ایف کی درجہ بندی میں 31 ویں پوزیشن پر آگئی۔  پچھلے سال وہ 18 ویں نمبر پر تھا۔  وائس چانسلر نے خط میں کہا کہ اے ایم یو میں کل 2911 کل وقتی ریسرچ طلبہ ہیں جبکہ این آئی آر ایف کے اعداد و شمار میں صرف 33 دکھائے گئے ہیں۔  انہوں نے کہا کہ اے ایم یو نے طے شدہ 5 معیارات میں سے چار پر بہتر اسکور حاصل کیا۔  تاہم ، ان کی درجہ بندی گریجویشن کے آٶٹ کم کے پیمانے کے اعتبار سے کی گٸی ہے جس سے رینکنگ میں گراوٹ آٸی ہے۔
 پروفیسر منصور نے مرکزی ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ منسٹر سے درخواست کی ہے کہ درجہ بندی کے کام میں ان غلطیوں کو جلد از جلد درست کیا جائے کیونکہ درجہ بندی میں کمی کی وجہ سے اے ایم یو طلباء کے کیریئر کے امکانات متاثر ہوں گے۔  اہم بات یہ ہے کہ ، پچھلے ہفتے جاری ہونے والی این آئی آر ایف کی درجہ بندی میں اے ایم یو 31 ویں پوزیشن پر آگیا ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot