Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Tuesday, July 14, 2020

عید الاضحیٰ پر جانوروں کی قربانی کا کوئی نعم البدل نہیں: مفتی اعظم مفتی ناصر الاسلام.

سری نگر، 14 جولائی 2020 (یو این آئی)۔/صداٸے وقت .
==============================
 جموں وکشمیر کے مفتی اعظم مفتی ناصر الاسلام نے جامعہ نظامیہ حیدر آباد کے قربانی کے متعلق فتوے کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عید الاضحیٰ کے موقع پر جانوروں کی قربانی کا کوئی نعم البدل نہیں ہے تاہم لوگوں کو تمام تر احتیاطی تدابیر پر عمل کر کے قربانی کا گوشت ہمسایوں اور رشتہ داروں میں تقسیم کرنا چاہئیے۔
بتادیں کہ جامعہ نظامیہ حیدر آباد کے دارالفتاح کی طرف سے حال ہی میں جاری ایک فتوے میں کہا گیا ہے کہ اگر کوئی مسلمان عید الاضحیٰ کے موقع پر جانوروں کی قربانی سے قاصر ہے تو وہ اتنی ہی رقم غریبوں کو عطیہ کرسکتا ہے، جو کہ قربانی کا بدل ہوگا۔
موصوف مفتی اعظم نے یو این آئی اردو کو بتایا کہ قربانی کا کوئی دوسرا متبادل نہیں ہے۔
ان کا کہنا تھا: ‘عید الاضحیٰ پر قربانی کا کوئی متبادل نہیں ہے، ہمیں قرآن اور اسلام کے خطوط پر عمل کرنا ہے علما پر نہیں جنہوں نے دین اور اپنے آپ کو ہندوستان کے پاس گروی رکھا ہے’۔تاہم مفتی اعظم ناصر الاسلام نے کہا کہ کورونا کے پیش نظر لوگوں کو تمام تر احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا ہونا چاہئے۔انہوں نے کہا: ‘کورونا کے پیش نظر لوگوں کو چاہئے کہ وہ صحت وصفائی کا خاص خیال رکھیں اور تمام گائیڈ لائنز پر عمل کریں، سڑکوں پر خون نہ بہائیں، اوجڑی اور چرم قربانی کو زمین میں دفن کریں اور گوشت کو زیادہ نزدیکی ہمسایوں میں ہی تقسیم کرنے کی کوشش کی جانی چاہئے’۔
شری امر ناتھ یاترا کے بارے میں موصوف مفتی اعظم نے کہا: ‘امرناتھ جی یاترا میں ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے البتہ یاتری کو پہلے کورنٹائن کیا جانا چاہئے پھر اس کو یاترا کی اجازت دی جانی چاہئے تاکہ وہ خود بھی محفوظ رہ سکے اور باقی لوگوں کا بھی تحفظ یقینی بن سکے’۔

Post Top Ad

Your Ad Spot