Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, September 3, 2018

بارش، طنزو مزاح۔

بارش پر مشتاق احمد یوسفی کی ایک مزاحیہ تحریر سے ما خوذ۔
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . 
صدائے وقت۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ایسی بارش ہم نے صرف مسوری میں اپنی شادی کے دن دیکھی تھی کہ پلاﺅ کی دیگوں میں بیٹھ کر دلہن والے آجارہے تھے ۔ خود ہمیں ایک کفگیر پر بٹھا کر قاضی کے سامنے پیش کیا گیا۔ پھر نہ ہم نے ایسی حرکت کی نہ بادل ایسا ٹوٹ کے برسا ۔عجب سماں تھا جدھر دیکھو پانی ہی پانی، اُس دن سوائے دلہن کی آنکھ کے ہمیں کوئی چیز خشک نظر نہ آئی ۔ ہم نے ٹہو کا دیا کہ رخصتی کے وقت دلہن کا رونا رسومات میں داخل ہے۔ انہوں نے بہت پلکیں پٹ پٹائیں مگر ایک آنسو نہ نکلا پھر کار میں سوار کراتے وقت ہم نے سہرا اپنے چہرے سے ہٹایا ۔ خوب پھوٹ پھوٹ کر روئیں۔
(مشتاق احمد یوسفی)۔

Post Top Ad

Your Ad Spot