Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Sunday, April 7, 2019

عظیم اتحاد کی پہلی مشترکہ انتخابی ریلی دیوبند میں. . . . . مسلم لیڈروں کو رکھا گیا منچ سے دور۔


صدائے وقت/ نمائندہ۔
دیوبند۔۔۔۔سہارنپور ۔۔اتر پردیش۔۔۔اتر پردیش میں سماجوادی پارٹی ، بہوجن سماج پارٹی و راشٹریہ لوک دل کے رہنما اکھیلیش یادو، مایاوتی اور چودھری اجیت سنگھ کی انتخابی مشترکہ پہلی ریلی دیوبند میں منعقد کی گئی۔مغربی اتر پردیش کے دیوبند علاقے میں مسلم ووٹروں می تعداد فیصلہ کن ہے مگر اس موقع پر کسی بھی مسلم لیڈر کو چاہے وہ بی ایس پی کا ہو سماجوادی کا یا آر ایل ڈی کا اسٹیج پر جگہ نہیں دی گئی۔
اس موقع پر تینوں نیتاوں نے عظیم اتحاد کو ووٹ دینے کی اپیل کی مگر مسلم رہنماوں کو حاشیئے پر رکھ کر دیوبند جیسی جگہ پر ریلی کرنا کیا پیغام دیتا ہے اس بابت مسلم عوام سوچنے پر مجبور ہو رہا ہے۔
وہ نیتا جو کل تک دیوبند کے عوام پر مایاوتی ، اکھلیش و اجیت سنگھ کے قریب ہونے رعب بتاتے تھے وہ بھی حاشئیے پر ہی نظر آئے۔پرانے وفادار اور باثر مسلم لیڈروں کو بھی اسٹیج تک نہیں پہنچنے دیا گیا۔
عوامی ردعمل یہ ہے کہ دیوبند میں ریلی کرکے یہ پارٹیاں مسلمانوں کے ووٹ تو لینا چاہتی ہیں مگر مسلمانوں سے ان کو کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot