Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, October 19, 2019

بانگ کہن۔۔۔۔۔۔۔۔۔سلسلہ57......از مولانا فضیل احمد ناصری۔



۔از/ فضیل احمد ناصری /صداٸے وقت
========================

صد حیف رہ گئی فقط ، یہ قوم خواب آشنا
پھر کیوں نہ ہو یہ قافلہ اے دل! عذاب آشنا

تیرے  مرے  ضمیر  پر حق کا پیام کیا کھلے
تو  بھی  شراب  آشنا، میں  بھی شراب آشنا

زلفیں اڑی ہوئی ملیں، چہرے کھلے ہوئے ملے
شاید   یہاں   نہیں  رہا ، کوئی  حجاب  آشنا

جرات عقاب میں جو تھی،مسندچرا کےلےگئی
بوجہل  بن  کے  رہ  گئے  سارے  کتاب   آشنا

مشرق کا آفتاب بھی مغرب میں غرق  ہو گیا
مرغِ  حرم   بھی  ہو  گیا  یا رب ! عتاب آشنا

ہو بھی اگر، تو کس لیے،ظالم تری فغاں قبول
ظاہر    رباب    آشنا   ،   باطن    رباب    آشنا

 مومن ہے تو ، بلند  کر حق کے  لیے نوا  کوئی
ہوگا  وگرنہ  دن  بہ  دن ،  باطل  شباب  آشنا

رونق اسی کےدم سے ہے، مالی اسےجدا نہ کر
تیری   نگاہ   ہی   نہیں   شاید   گلاب   آشنا

میں نے ہجومِ کفر میں ایسا سوال  رکھ  دیا
حیرت  میں ڈوب ہی گئے، سارے جواب آشنا

Post Top Ad

Your Ad Spot