Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, January 20, 2020

کربلا کے میدان میں آنیوالوں سے چند گزارشات۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔مولانا طاہر مدنی۔

از/مولانا طاہر مدنی /صداٸے وقت۔
=============================
21 جنوری کو عظیم الشان مظاہرے میں آنے والوں سے چند گزارشات ہیں، امید ضرور توجہ دیں گے.
سیاہ قانون اور این آر سی و این پی آر کے خلاف ملک کے کونے کونے میں پرامن احتجاج جاری ہے. حکومت پریشان ہے اور حکمراں جماعت کے افراد طرح طرح کے بیانات دے رہے ہیں، صفائی دے رہے ہیں کہ قانون شہریت دینے کیلئے ہے، چہیننے کیلئے نہیں ہے، سوال یہ ہے کہ شہریت دینے میں مذہب کی بنیاد پر بھید بھاؤ کیوں؟ پڑوسی ممالک میں تفریق کیوں؟ یہ قانون مظلوموں میں بھی تفریق کرتا ہے اور ظالموں میں بھی، یہ قانون دستور میں دیے گئے برابری کے حق کے منافی ہے، اس لیے اس کو واپس لینا ضروری ہے، این آر سی یہاں کے باشندوں کے خلاف ایک سازش ہے اور این پی آر اس کی سیڑھی ہے، اس لیے ان دونوں کا بائیکاٹ ضروری ہے. وزیر داخلہ نے بار بار سیاہ قانون کو این آر سی کے ساتھ جوڑا، اس سے ثابت ہوا کہ کیا ارادہ ہے، اب عوام ان کے ایجنڈے سےواقف ہوچکے ہیں، اب کوئی جھانسے میں آنے والا نہیں ہے. مطالبات کی تکمیل تک مظاہرے جاری رہیں گے. ان شاء اللہ
ان مظاہروں کی کامیابی کے دو اسباب ہیں، ایک تو یہ کہ مشترک ہیں اور ہر مذہب کے لوگ ان میں شامل ہیں اور دوسرا سبب یہ ہے کہ یہ مکمل طور پر پرامن ہیں. پولیس اور نقاب پوش غنڈوں کی کھلی جارحیت کے باوجود یہ عدم تشدد کی راہ پر گامزن ہیں.
اعظم گڑھ کے تاریخی مظاہرے میں آنے والوں سے درخواست ہے کہ؛
١.دعا کا اہتمام کریں اور اللہ سےکامیابی طلب کریں، اس کی تائید کے بغیر کچھ نہیں ہوسکتا.
٢.. چھوٹی چھوٹی جماعتوں کی شکل میں اجتماعیت کے ساتھ آئیں اور اپنے امیر کی اطاعت کریں.
٣. برادران وطن کو ساتھ رکھیں اور باہمی اشتراک و تعاون کا ثبوت دیں.
٤.. گاڑیاں میدان کربلا سے دور مختلف علاقوں میں میں پارک کریں تاکہ نظم و ضبط میں آسانی ہو.
٥.. صرف ترنگا ہاتھ میں لہرائیں، کوئی دوسرا جھنڈا نہ ہو.
٦.. مناسب نعرے لگائیں اور کوئی اشتعال انگیز نعرہ ہرگز نہ لگائیں.
٧.. اپنی ذات سے کسی کو تکلیف نہ دیں، لوگوں کو سہولت پہونچائیں، زحمت کا سبب نہ بنیں.
٨.. ٹریفک جام نہ کریں، ہوسکتا ہےکوئی مریض، کوئی شدید ضرورت مند ہو.
٩..  ہاتھوں میں تختیاں، بینر اور پلے کارڈز ہوں تاکہ آپ کے مطالبات نمایاں ہوسکیں.
١٠.. ڈایس سے دی جانے والی ہدایات کا خیال رکھیں اور ان پر عمل کریں.
١١... پریس والے پوچھیں تو صاف کہدیں کہ شہریت ترمیمی قانون آئین کی دفعہ چودہ سے ٹکراتا ہے جو برابری کا حق دیتی ہے. این آر سی کے ذریعے باشندگان ملک کی شہریت مشکوک بنانے کا وسیع پیمانے پر منصوبہ ہے، اس لیے ہم مخالف ہیں.
١٢... دن بھرکا پروگرام ہے اس لیے دانا بھیلی ساتھ لے کر آئیں.
١٣.. بزرگوں کا خیال رکھیں اور چھوٹے بچوں کو ساتھ نہ لائیں.
١٤.. لڑائی لمبی ہے، اس لیے بار بار دھرنا پردرشن کیلئے تیار رہیں.
١٥.. قومی اور اجتماعی کاموں کیلئے قربانی دینے کا فیصلہ کریں اور غفلت نہ برتیں.
١٦.. مشترک پروگرام ہے، سب کا خیال رکھیں اور کسی طرح کی عصبیت کا مظاہرہ نہ کریں.
١٧.. عوام میں بیداری پیدا کرتے رہیں اور سرکار کی بدنیتی سے آگاہ کرتے رہیں.
١٨.. غربت، مہنگائی، بے روزگاری، بدعنوانی، غنڈہ گردی، استحصال اور سرکاری خزانے کی لوٹ جیسے سنگین مسائل کو اجاگر کریں اور حکومت کی سازش کو ناکام بنائیں.
١٩.. پروگرام کے اختتام پر پرامن طریقے سے واپسی کریں اور راستے میں آنے جانے والوں کو تکلیف نہ دیں.
٢٠.. حوصلہ کبھی نہ ہاریں اور اللہ کی ذات پر مکمل بھروسہ رکھیں....
حسبنا الله ونعم الوكيل، نعم المولى ونعم النصير
اللہ ہمارے لیےکافی ہے، کتنا بہترین وہ کارساز ہے اور کتنا عمدہ وہ مددگار ہے.
اس کا ورد مسلسل کرتے رہیں، اللہ ہی حالات بدلتا ہے.

طاہر مدنی، قومی جنرل سیکرٹری، راشٹریہ علماء کونسل
٢٠ جنوری ٢٠ ٢

Post Top Ad

Your Ad Spot