Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, June 22, 2020

چینی ‏اشیإ ‏و ‏ہندوستانی ‏عوام۔

ہندی سے ترجمعہ کی گٸی ایک پوسٹ/صداٸے وقت۔
==============================
 * چینی سامان توڑنا ، چینی سامان نہ خریدنا بیوقوفی  کے سوا کچھ نہیں ہے۔  یہ ان کی پرانی عادت ہے کہ جذبات میں بہا کر لوگوں کو احمق بنائیں۔  کیا ہم  نے سامان میں  خریدی ہوئی چیزوں کو توڑ کر چین کو نقصان پہنچایا یا ؟؟  چین سے درآمد کرنے کے بعد جو سامان ہندوستان آیا ہے اس کا بائیکاٹ کرتے ہوئے آپ چین یا ان چھوٹے دکانداروں کو نقصان پہنچائیں گے جنھوں نے یہ سامان اپنی روزمرہ کی روٹی کے لئے خریدا ہے۔ *
 اگر چینی سامان کا بائیکاٹ کرنا ہے تو وزیر اعظم کو ٹی وی پر آکر یہ اعلان کرنا چاہئے کہ ہندوستان آج رات 12 بجے کے بعد چین کے ساتھ اپنے تجارتی تعلقات ختم کررہا ہے۔  آج سے چین سے کوئی سامان درآمد نہیں کیا جائے گا۔  ہندوستان میں کام کرنے والی تمام چینی کمپنیاں ، ان کا لائسنس منسوخ کردیا گیا ہے۔  اگر چین کا سامان درآمد نہیں کیا گیا تو ہندوستان بھی "خود کفیل" ہوجائے گا اور چین کو بھی سبق مل جائے گا۔ *

 * ٹی وی پھاڑنے  والا ڈرامہ کام نہیں کرے گا ، عوام ماسٹر اسٹروک کے منتظر ہیں۔ *

Post Top Ad

Your Ad Spot