Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Tuesday, July 7, 2020

عیدالاضحی کو لےکر جماعت اسلامی ہند نے جاری کی گائڈ لائن.

جماعت اسلامی ہند کی شریعہ کونسل نے عید الاضحیٰ سے متعلق اپیل پر مبنی گائڈ لائن جاری کی ہے، جس میں صاف طور پرکہا گیا ہےکہ جو بھی صاحب استطاعت یعنی جن لوگوں پر قربانی واجب ہے ان کو قربانی ضرور کرنا چاہئے اور کوئی بھی صدقہ، خیرات اور رفاہی کام قربانی کا بدل نہیں ہوسکتا.

نٸی دہلی: /صداٸے وقت /پریس ریلیز /7 جولاٸی 2020.
===============================
جماعت اسلامی ہند کی شریعہ کونسل نے عید الاضحیٰ سے متعلق اپیل پر مبنی گائڈ لائن جاری کی ہے، جس میں صاف طور پرکہا گیا ہےکہ جو بھی صاحب استطاعت یعنی جن لوگوں پر قربانی واجب ہے ان کو قربانی ضرور کرنا چاہئے اور کوئی بھی صدقہ، خیرات اور رفاہی کام قربانی کا بدل نہیں ہوسکتا۔ جماعت اسلامی کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس کی شدت اور مختلف سرکاری پابندیوں کی وجہ سے موجودہ حالات میں مسلمانوں کی طرف سے نماز عید اور قربانی کے بارے میں مختلف سوالات کئے جارہے ہیں۔ شریعہ کونسل جماعت اسلامی ہند نے ایک بیان میں کہا کہ قربانی حضرت ابراہیمؑ کی سنت ہے، اس پر خاتم النبیین نے عمل کیا ہے اور اپنی امت کو بھی اس کی تاکید کی ہے، یہ محض کوئی رسم نہیں ہے۔ حدیث میں ہے کہ آیا ہے کہ ایام قربانی میں اللہ تعالیٰ کو قربانی سے بڑھ کر کوئی عمل محبوب نہیں۔ اس لئے مسلمانوں کو عید الاضحی کے موقع پر حتی الامکان قربانی کرنے کی کوشش کرنی چاہئے۔
صدقہ، خیرات، رفاہی خدمات یا دیگرکوئی نیک عمل اس کا بدل نہیں ہوسکتا، جن صاحب حیثیت لوگوں پر قربانی واجب ہو، وہ خواہش اور کوشش کے باوجود سرکاری پابندیوں یا دیگر موانع کی وجہ سے قربانی نہ کرسکیں، اگر وہ دوسرے مقام پر اپنی قربانی کرواسکیں تو اس کی کوشش کریں۔ اگر یہ بھی ممکن نہ ہو تو ایام قربانی گزرنے کے بعد قربانی کے بقدر رقم غریبوں میں صدقہ کردیں۔ مسلمان قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے دین و شریعت پر عمل کرنے کی کوشش کریں، جن جانوروں کے ذبیحہ پر پابندی ہو، ان کی قربانی سے احتراز کریں۔ قربانی کے سلسلے میں موجودہ وبائی صورت حال کے پیش نظر تمام احتیاطی تدبیریں ملحوظ رکھیں۔ راستوں اور گزرگاہوں پر قربانی نہ کریں۔ صفائی ستھرائی کا خاص خیال رکھیں۔ خون، فضلات اور زائد اجزا کو دفن کردیں یا کوڑا کرکٹ کے متعینہ مقامات تک پہنچائیں۔
شریعہ کونسل جماعت اسلامی ہند نے ایک بیان میں کہا کہ قربانی حضرت ابراہیمؑ کی سنت ہے، اس پر خاتم النبیین نے عمل کیا ہے اور اپنی امت کو بھی اس کی تاکید کی ہے، یہ محض کوئی رسم نہیں ہے۔
مناسب ہے کہ ہر علاقے میں عید الاضحیٰ سے چند روز قبل ایک کمیٹی تشکیل دی جائے، جو حالات پر نظر رکھے۔ مقامی حکام سے برابر رابطہ رکھے اور امن و قانون کی صورت حال کو بحال رکھنے میں اپنا تعاون پیش کرے۔ عید الاضحی کی نماز سماجی فاصلہ  برقرار رکھتے ہوئے عیدگاہوں اور مسجدوں میں ادا کی جائے۔ جن علاقوں میں کورونا کی وجہ سے حکام نے پابندی عائد کر رکھی ہے، وہاں مسلمان اپنے گھروں میں نماز عید ادا کریں، جیسے عید الفطر کی نماز ادا کی تھی۔ شریعہ کونسل مرکزی اور ریاستی حکومتوں سے مطالبہ کرتی ہے کہ نماز عید الاضحی اور قربانی کی مسلمانوں کے نزدیک غیر معمولی اہمیت کے پیش نظر انہیں اس سلسلے میں ہرممکن سہولت اور شر پسندوں سے تحفظ فراہم کریں۔

Post Top Ad

Your Ad Spot