Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Tuesday, August 18, 2020

قانونی ‏خواندگی ‏کیمپ ‏کا ‏انعقاد ‏۔

جون پور۔۔۔اتر پردیش / صداٸے وقت /١٨ اگست ٢٠٢٠ (نماٸندہ)۔
==============================
اتر پردیش لیگل سروسز اتھارٹی کی ہدایت کے مطابق اورضلع جج ایم پی سنگھ کی ہدایت پر منگل کے روز تحصیل آڈیٹوریم بیوہ خواتین، مختلف معذور افراد اور بیٹی بچاؤ،بیٹی پڑھاؤ موضوع پر قانونی خواندگی  کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔اس موقع پر اتھارٹی کی سکریٹری پردپتی سنگھ کی جانب سے موجود تمام لڑکیوں / خواتین کو آئین سے متعلق بنیادی فرائض کا حلف دلایا گیا۔
اس موقع پر انھوں نے ہندوستانی آئین میں مذکورہ شہریوں کے بنیادی فرائض اور حقوق کے سلسلے میں بتاتے ہوئے کہا کہ ہر شہری کا بنیادی فرائض کی انجام دہی کا حق ہے، ہر شہری کو اپنے ملک، املاک اور عوامی مقامات کی حفاظت کی ذمہ داری قبول کرنی چاہئے۔ انھوں نے خواتین کے تحفظ اور حقوق کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ وہ معاشرے کا ایک اہم حصہ ہیں، زندگی کے ہر پہلو میں مساوی شراکت دار ہیں، انہوں نے کہا کہ ملک میں جنسی تناسب میں کمی واقع ہونا تشویش کی بات ہے، لڑکوں اور لڑکیوں کے مابین امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہیے. ہندوستان میں لڑکیوں کے خلاف امتیازی سلوک تو کئی برسوں سے جاری ہے۔ اب بھی رحم مادر میں لڑکیوں کے قتل کے واقعات روشنی میں آتے ہیں۔ اس سے متعلق پی سی پی این ڈی ایکٹ 1994 کے سلسلے میں انھوں نے کہا کہ موجودہ وقت میں جنسی تجربات کرنے کی کوشش کرنا یا کراناسزا کے قابل جرم ہے، اس ایکٹ کے تحت سزا اور جرمانہ دونوں ہوتے ہیں۔  انھوں نے کہا کہ لوگوں میں بیوہ خواتین کے لئے توازن کی بجائے مساوات کا احساس ہونا چاہئے۔ انہوں نے لڑکیوں کی تعلیم کا عمل جلد شروع کرنے اور زیادہ سے زیادہ لڑکیوں کو اسکول بھیجنے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ تعلیم یافتہ لڑکیاں اپنی زندگی میں دو کنبوں کو تعلیم اور رسومات مہیا کرتی ہیں۔ ان کے تحفظ اور پرورش میں کوئی تعصب غیر فطری اور قابل مذمت ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot