Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Thursday, September 10, 2020

درندوں ‏کو ‏شرمندہ ‏کرنے ‏والی ‏واردات۔۔۔۔۔۔

از/سمیع اللہ خان /صداٸے وقت ۔١٠ ستمبر ٢٠٢٠
==============================
 یہ اخلاق سلمانی نام کا شخص  ہے، یہ روزگار تلاشنے پانی پت گیا تھا، وہاں اس نے پانی طلب کیا، پانی کے بدلے بھیڑ نے اسے گھیر کر مارا،  مار مار کر ادھ مرا کردیا ایک جگہ لے کر گئے اور وہاں پھر " آرا مشین " سے اس کا ہاتھ کاٹ دیا گیا ہے، لہولہان حالت میں اسے ریلوے ٹریک پر پھینک دیا گیا، یہ نفرتیں زہر کے جرائم ہیں،  مسلمانوں کے خلاف مستقل مزاجی سے حکومت و میڈیا کی سطح سے جو اسلامو فوبیا پھیلایا گیا وہ راسخ ہوکر چھلک رہا ہے، 
 انصاف کون دےگا جبکہ سپریم۔کورٹ کے کہنے پر بھی مودی سرکار ماب لنچنگ کے خلاف قانون سازی نہیں کررہی البتہ وہ طلاق اور مسلمانوں کی شہریت کے خلاف قانون سازی کے لیے لالچی نظر آئے
 ایک ہفتے میں یہ چوتھی لنچنگ ہے، ہندوتوا کے مجرمانہ زہر سے لبریز جنونی بھیڑ پیاسے درندوں کی طرح تانڈو مچاتے ملک میں بزدلانہ ظلم کا ننگا ناچ کررہی ہے، قانون مجبور ہے، جمہوریت لاچار، پولیس غلام، وزراء محظوظ ہورہے ہیں اور مظلوم لوگ بزدل بنے ہوئے اپنی اپنی باری کا انتظار کررہےہیں، جاگیے پے در پے ہجومی دہشتگردی / لنچنگ کا سلسلہ پھر سے تیز ہورہا ہے، دادری کے اخلاق احمد سے شروع ہونے والی ہندوتوائی واردات پانی پاپت کے اخلاق سلمانی تک درندگی بڑھاتے پہنچی ہے، لنچنگ کے سَنگھی مجرم آزاد ہیں، کہیں ان کی پوجا ہوتی ہے کہیں استقبال، یہ ہے مودی۔اور امیت شاہ کی قیادت میں آر۔ایس۔ایس کا نیا انارکی والا ہندوستان، ماب لنچنگ کےخلاف جتنی دیر سے اٹھو گے اتنی زیادہ لاشوں کا بوجھ اٹھانا پڑےگا… ظالموں کی طرف سے خوف اور نفرت تیزی سے پھیلائی جارہی ہے، وہ زمین پر نفرت کا بازار گرم کرواکے تمہارے خلاف قتل و غارت برپا کروا رہے ہیں دوسری طرف ان کی ایجنسیاں سسٹم میں کمال چالاکی سے تمہارے حقوق غصب کرنے تمہیں حریت سے محروم کرنے اور " قابلِ ڈٹینشن " بنانے کے لیے انتھک محنت کررہےہیں وہ اپنے ہدف سے قریب اور تم مہیب خطرات سے بالکیہ بے پروا، اپنے لیے گڑھے کھودنے میں منہمک اور مدہوش _

#سمیع_اللّٰہ_خان
۱۰ ستمبر ۲۰۲۰ 
ksamikhann@gmail.com

Post Top Ad

Your Ad Spot