Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Thursday, October 29, 2020

ابھینندن ‏کو ‏لیکر ‏پاکستان ‏میں ‏نٸی ‏بحث ‏کا ‏آغاز۔۔۔حزب ‏اختلاف ‏کے ‏بیان ‏پر ‏حکومتی ‏وزراء ‏کا ‏بیان

ابھینندن کے معاملے پر ایاز صادق کا بیان اور ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا جواب: 26 فروری کو انڈیا کو ’منھ کی کھانی پڑی، انھیں اب تک تکلیف ہے‘

==============================
شبلی، ایاز، بابر

پاکستان مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی اور سابق سپیکر نیشنل اسمبلی ایاز صادق کے بھارتی پائلٹ ابھینندن کی رہائی کے بارے میں قومی اسمبلی کے ایوان میں دیئے گئے بیان پر شروع ہونے والا تنازع شدت اختیار کرتا جا رہا ہے۔ ایاز صادق کی وضاحت کے باوجود ان کا بیان انڈیا اور پاکستان کے ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر بیانات اور جوابی بیانات کی جنگ کا باعث بنا ہوا ہے۔

اس معاملے پر پاکستانی فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے ایاز صادق کا نام لیے بغیر کہا ہے کہ ’ایک ایسا بیان دیا گیا جس کے ذریعے قومی سلامتی سے منسلک ملکی تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی۔‘

اس کے علاوہ کابینہ کے وزرا بھی ان کے دعوؤں کو رد کرنے کے لیے میدان میں آ گئے۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے اپنی ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’بھارت کے 9 بجے حملے کی انٹیلی جنس رپورٹ بلکل ملی تھی. وہ حملہ اس لیے رکا کے بھارت کو پیغام پہنچایا گیا تھا کے ہمیں حملے کی تیاری کا بھی پتہ ہے اور جواباً اس سے زیادہ کاری ضرب لگانے کی تیاری بھی مکمل ہے. ابھی نندن کے جہاز گرنے کے بعد بھارت کو پتہ تھا ہم صرف زبانی دھمکی نہیں دیتے۔‘

Post Top Ad

Your Ad Spot