Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Thursday, November 5, 2020

بی ‏ایس ‏پی ‏ممبر ‏پارلیمنٹ ‏افضال ‏انصاری ‏کی ‏اہلیہ ‏کے ‏بنگلے ‏کو ‏گرانے ‏کی ‏اتر ‏پردیش ‏سرکار ‏کی ‏تیاری۔



لکھنٶ۔۔۔اتر پردیش /صداٸے وقت /ذراٸع/ 05 نومبر 2020.
==============================
 لکھنؤ: یوگی آدتیہ ناتھ سرکار کا  اتر پردیش میں کالے دھن کمانے والوں ، غیر قانونی اراضی مالکان اور کسی بھی طرح کی دھوکہ دہی میں ملوث افراد کے لئے کوٸی گنجاٸش  باقی نہیں  ہے۔  ریونیو ڈپارٹمنٹ  میں کاغذات نہ ملنے کے بعد انتظامیہ نے بی ایس پی کے رکن پارلیمنٹ افضال انصاری کی اہلیہ کا بنگلہ منہدم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
 واضح ہو  کہ لکھنؤ کے گھیلہ  میں سرکاری اراضی پر بنایا گیا  عظمت علی کا  کیریئر میڈیکل اور ڈینٹل کالج بھی  منہدم کیا جائے گا۔  ریونیو کونسل میں بی ایس پی کے رکن قومی اسمبلی افضالبتہ انصاری  کی اہلیہ کے بنگلے کے کاغذات نہیں ملے۔  دہلی تک اراضی کے کاغذات تلاش کیے گئے۔  اسی کے ساتھ ہی لکھنؤ ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے ان کے بنگلے کا نقشہ منسوخ کردیا ہے۔  ایل ڈی اے نے ان کے بنگلے کو غیر قانونی قرار دے دیا ہے۔
 اس بارے میں ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ ابھیشیک پرکاش نے بتایا کہ افضل انصاری کی اہلیہ کا بنگلہ سرکاری املاک کی زمین پر بنایا گیا ہے۔  ریونیو کونسل میں اس کی نجی ملکیت کا کوئی ثبوت نہیں ملا ہے۔  دہلی تک اس کے دستاویزات کا سراغ لگا لیا گیا ہے۔  لیکن زمین کا کوئی نجی ثبوت نہیں مل سکا ہے۔  انہوں نے کہا کہ اس کے انہدام میں کوئی قانونی رکاوٹ نہیں ہے۔  اس کی سماعت کچھ عدالتی رسمی  کارواٸی کے انجام دینے کے بعد  ہوگی۔

Post Top Ad

Your Ad Spot