Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, November 9, 2020

اب ‏مختار ‏انصاری ‏کے ‏بڑے ‏بیٹے ‏عباس ‏انصاری ‏کے ‏پلاٹ ‏پر ‏قبضہ ‏کرنے ‏کی ‏تیاریاں۔

غازی پور۔۔اتر پردیش /صداٸے وقت /ذراٸع / ٩ نومبر ٢٠٢٠۔
==============================
 غازی پور  انتظامیہ نے  ایم ایل اے مختار انصاری کے بڑے بیٹے عباس انصاری کے پلاٹ پر قبضہ کرنے کی تیاری شروع کردی ہے۔  یہ پلاٹ شہر سے بالکل متصل ٹہدیوا (راج پور ہیک) میں واقع گورنمنٹ ہومیو پیتھک کالج سے متصل ہے۔  اس کا رقبہ 1360 مربع فٹ کے ارد گرد بتایا جاتا ہے۔
 ذراٸع کے مطابق خلیج میں رہنے والے ایک  کاروباری  کے کنبہ سے تعلق رکھنے والا کنبہ  کی ملکیت  میں یہ پلاٹ  تھا ، لیکن اس خاندان نے عباس انصاری کو یہ پلاٹ دے دیا تھا ۔  اس پلاٹ پر کچھ تعمیر ہورہی ہے۔  انتظامی ذرائع نے بتایا کہ گینگسٹر ایکٹ کے تحت عباس انصاری کا پلاٹ بھی ضبط کرنے کے لئے تیار ہے۔  یہ معلوم ہو کہ ہفتے کی شام مختار کی اہلیہ افشاں انصاری اور شرجیل رضا اور انور شہزاد  کے قصبے کوتوالی کے گاوں  بواڑی میں دو سال کی زمین منڈی کے ساتھ منسلک ہوگئی تھی۔  اس کی موجودہ مارکیٹ قیمت لگ بھگ 2 کروڑ روپے بتائی گئی تھی۔  وہ کارروائی ڈی ایم ایم سنگھ کے حکم پر گینگسٹر ایکٹ کے تحت بھی کی گئی تھی۔
 غازی پور  میں  مختار انصاری کے ہوٹل غزل واقع  مہوبہ باغ اور اس کے آس پاس کی زندگی اب خوف کے سائے سے نکل رہی ہے۔  یکم نومبر کی صبح ، انتظامیہ نے ہوٹل کے گراونڈ  اور بالائی منزل کے کچھ حصے کو مکمل طور پر منہدم کردیا۔  تب سے ، ہوٹل کی زیریں منزل کی دکانیں بند تھیں۔  آس پاس بھی خاموشی تھی ، لیکن اب یہ سب کچھ  شروع ہورہا ہے ۔چہل پہل بڑھ رہی  ہے۔  ہفتہ وار بندش کے باوجود اتوار کی شام دکانیں کھلی تھیں۔

Post Top Ad

Your Ad Spot