Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Wednesday, December 30, 2020

خاتون ‏نے ‏لگایا ‏پولیس ‏پر ‏ہراساں ‏کرنے ‏کا ‏الزام۔۔۔ایس ‏پی ‏سے ‏کی ‏فریاد


 انصاف نہ ملنے پر پورے کنبہ کے ساتھ  خود کشی کی دھمکی 
جونپور۔۔اتر پردیش /صداٸے وقت /نماٸندہ /٣٠ دسمبر ٢٠٢٠۔
==============================
 جونپور  کھیتاسراٸے تھانہ حلقہ  کے مانی کلا گاؤں کی  رہائشی خاتون  عزیز النسإ زوجہ فاروق نے ایس پی راجکرن نیئر سے ملاقات کر کے  ا اپنے بیٹے افسر سمیت اپنے کنبہ کے افراد کی حفاظت  اور انصاف کی درخواست کی ہے۔  ایس پی کو دیئے گئے شکایتی خط میں ، عزیز النسإ  نے پڑوسی ضلع اعظم گڑھ کے بردہ ، کپتان گنج ، گمبھیر پور ، دیوگاؤں ، اہرولا پولیس اسٹیشن کی پولیس کو جھوٹے مقدمات میں ہراساں کرنے اور اس میں ملوث کرنے کا الزام بھی عائد کیا ہے۔      عزیز النسإ  نے بتایا کہ سن 2019 میں ان کے بیٹے افسر کو پولیس نے گھر سے اٹھایا تھا اور جعلی کیس میں سنگین دفعات میں ملوث کرنے کے بعد اسے جیل بھیج دیا گیا تھا۔  جنوری 2020 میں ، اعظم گڑھ کے تھانہ بردہ  کی پولیس نے گینگسٹر کے تحت کارروائی کی۔  جبکہ میرا بیٹا بے قصور ہے۔  ہم نے کسی طرح اپنی زمین کو رہن  رکھ کے ضمانت کراٸی  اور بیٹے کو معاش کے لئے بیرون ملک بھیج دیا ، جب تاریخ پڑتی  ہے تو وہ حاضر ہوتا ہے۔  اس کے باوجود ، کھیتا سراٸے کے تھانہ کی  پولیس اور اعظم گڑھ کے کپتان گنج ، بردہ ، اہرولا ، گمبھیر پور ، دیوگاؤں ، اہروولا  تھانہ کی پولیس  ہراساں کر رہی ہے ۔ہسٹری شیٹ  کھولنے ، غنڈوں ایکٹ کی  کارروائی ، گنڈکٹ ، 110 جی ، اور انعامیہ ملزم  کی دھمکی دی گئی ہے۔  اگرچہ میرے بیٹے کا پہلے سے کوئی مقدمہ نہیں چل رہا تھا ، وہ بے قصور ہے اور اس کو پھنسایا جارہا ہے۔  پولیس نے پورے کنبے کی زندگی تباہ کردی ہے۔  رات کے وقت ، پولیس گھر پر پہنچتی ہے اور انھیں دباؤ اور اذیتیں دینا شروع کردیتی ہے۔  گھر میں سیانی بہنیں بیٹیاں ہیں ، پولیس کی کارروائی کی وجہ سے پورا خاندان خوفزدہ ہوجاتا ہے۔  ایس پی سے  انصاف کا مطالبہ کیا۔  ہے انصاف نہ ملنے کی صورت  میں پورا خاندان خود کشی کرنے پر مجبور ہوجائے گا۔

Post Top Ad

Your Ad Spot