Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Thursday, February 11, 2021

بنارس ضلع جیل سے شہری حقوق کے تحفظ (ای پی سی آر) کی قانونی امداد سے 4 قیدی رہا۔


 * ایسوسی ایشن کی کوششوں کی وجہ سے اب تک پورانچل میں 125 افراد کو رہا کیا گیا ہے *
  بنارس: اتر پردیش / صدائے وقت/ ڈرائع 
+++++++++++++++++++++++++++++
ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سول رائٹس (اے پی سی آر) جو غریب اور پسماندہ لوگوں کو قانونی مدد اور رہنمائی ، غریبوں کے لئے قانونی تحفظ ، ناانصافی کا شکار افراد کے لئے قانونی دفاع اور ملک و معاشرے سے ناانصافیوں اور مظالم کے خاتمے کے لئے قانونی امداد فراہم کرتا ہے۔ ایسے ماحول میں جہاں معاشرے کے کسی فرد کے ذریعہ ہونے والے جرم کی وجہ سے سوسائٹی اور اس کے کنبہ کے افراد ان کے ساتھ چھوڑ جاتے ہیں ، ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سول رائٹس (اے پی سی آر) ایسے افراد کو قانونی مدد فراہم کرتا ہے۔
 اس فہرست میں بنارس ڈسٹرکٹ جیل سے
 1- نرملا دیوی
 2- جگدیش
 3- نوشاد
 4- جہانگیر
کو  رہا کرایا گیا ہے۔
 اسوسی ایشن کے سکریٹری ایڈووکیٹ نجم الثاقب خان نے اس موقع پر کہا کہ گذشتہ کئی مہینوں سے اے پی سی آر کی مسلسل کوششوں کی وجہ سے اتر پردیش کے مختلف اضلاع سے لگ بھگ 128 افراد کو رہا کیا گیا۔  آج رہا ہونے والوں کے بارے میں ایڈووکیٹ خان نے بتایا کہ جیل کی درخواست پر ، اے پی سی آر نے معاملے کو سنجیدگی سے لیا اور قیدی کی قانونی معاونت حاصل کی اور رہا کرایا۔
 ایسوسی ایشن برائے تحفظ شہری حقوق کے سکریٹری ایڈوکیٹ نجم الثاقب خان نے بتایا کہ ریاست کی مختلف جیلوں میں اب بھی چھ سے زیادہ قیدی بند ہیں اور بہت سے غریب اور بے گناہ قیدی جیل کی پریشانیوں کا شکار ہیں جنہیں معمولی جرائم کی وجہ سے سزا کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ان قیدیوں کو قانونی مدد فراہم کرنے اور انہیں رہا کرنے اور سماجی زندگی سے جوڑنے کی ضرورت ہے تاکہ معاشرے میں جرائم کے تناسب کو کم کیا جاسکے۔
 اس موقع پر ڈاکٹر اکبر حاجی اشتیاق گلساد احمد محمد عرفان موجود تھے۔

 اس معاملے میں جیل انتظامیہ کا مکمل تعاون حاصل رہا۔
 
  محمد اسد اعظمی
 9648434494

Post Top Ad

Your Ad Spot