Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, April 30, 2021

مزدوروں ‏کا ‏ گیت ‏. ‏. ‏ یکم ‏مئی ‏ عالمی ‏ یوم ‏ مزدور ‏کے ‏ ضمن ‏میں ‏. ‏

یکم مئی۔۔۔یوم مزدور کے موقع ہر۔/صدائے وقت. /1 مئی 2021 
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مزدوروں کا گیت
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
از/ اسرار الحق مجاز
139
محنت سے یہ مانا چور ہیں ہم 

آرام سے کوسوں دور ہیں ہم 

پر لڑنے پر مجبور ہیں ہم 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

گو آفت و غم کے مارے ہیں 

ہم خاک نہیں ہیں تارے ہیں 

اس جگ کے راج دلارے ہیں 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

بننے کی تمنا رکھتے ہیں 

مٹنے کا کلیجہ رکھتے ہیں 

سرکش ہیں سر اونچا رکھتے ہیں 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

ہر چند کہ ہیں ادبار میں ہم 

کہتے ہیں کھلے بازار میں ہم 

ہیں سب سے بڑے سنسار میں ہم 

مزدور میں ہم مزدور ہیں ہم 

جس سمت بڑھا دیتے ہیں قدم 

جھک جاتے ہیں شاہوں کے پرچم 

ساونت ہیں ہم بلونت ہیں ہم 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

گو جان پہ لاکھوں بار بنی 

کر گزرے مگر جو جی میں ٹھنی 

ہم دل کے کھرے باتوں کے دھنی 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

ہم کیا ہیں کبھی دکھلا دیں گے 

ہم نظم کہن کو ڈھا دیں گے 

ہم ارض و سما کو ہلا دیں گے 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

ہم جسم میں طاقت رکھتے ہیں 

سینوں میں حرارت رکھتے ہیں 

ہم عزم بغاوت رکھتے ہیں 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

جس روز بغاوت کر دیں گے 

دنیا میں قیامت کر دیں گے 

خوابوں کو حقیقت کر دیں گے 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

ہم قبضہ کریں گے دفتر پر 

ہم وار کریں گے قیصر پر 

ہم ٹوٹ پڑیں گے لشکر پر 

مزدور ہیں ہم مزدور ہیں ہم 

Post Top Ad

Your Ad Spot