Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, September 1, 2018

اب سلطان پور کا بھی نام تبدیل کرنے کی کوشش۔

اب سلطان پور کا بھی نام تبدیل کرنے کی کوششیں تی
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . .  
سلطان پور کو تبدیل کرکے ""کش بھون پور "" رکھنے کی تجویز۔
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . نمائندہ صدائے وقت۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
(سلطان پور اتر پردیش)۔جب سے یو پی میں بی جے پی کی سرکار بنی ہے تب سے یو پی کے شہروں کے نام کو تبدیل کرنے کی ہوڑ سی لگی ہے۔مغلسرائے ریلوے اسٹیشن کا نام تبدیل کر دیا گیا ہے۔لکھنو کو لکچھمن پور۔۔الہ آبا کو پریاگ راج بنانے کی مانگ ہندو وادی تنظیموں کی پہلے سے ہی ہو رہی ہے۔اسی کڑی میں اب سلطان پور (یو پی) کا نام تبدیل کرنے کی مہم میں تیزی آگئی ہے۔اس سلسلے میں بی جے پی کے اسمبلی رکن ایوان زیریں میں مان سون اجلاس کے آخری روز ایک تجویز پیش کی  جسکو بحث کے لئیے منظور کر لیا گیا۔اگلے اجلاس میں رول 311 کے تحت بحث ہوگی۔تجویز میں کہا گیا ہے کہ سلطان پور کا نام تبدیل کرکے رام چندر جی کے بیٹے کش کے نام پر اس شہر کا نام کش بھون پور رکھ دیا جائے۔سلطان پور اسمبلی حلقہ لمھوا کے بی جے پی ایم ایل اے  دیو منی نے اس تجویز کو پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس شہر کو رام چندر جی کے بیٹے کش نے بسایا تھا لہذا اس شہر کا نام تبدیل کرکے انھیں کے نام پر کش بھون پور کر دیا جائے۔
اسمبلی اسپیکر ہر دے نارائن دیکشت نے اس قرار داد کو واضح اکثریت سے منظور کرنے کا اعلان کرتے ہوئے اگلے سیشن میں بحث کے لئے منظوری دے دی ہے۔
شہر سلطان پور یو پی کا ایک مشہور ضلع ہیڈ کوارٹر ہے جو دریائے گومتی کے کنارے بسا ہوا ہے جسکی آبادی 2011 کی مردم شماری کے مطابق قریب 38 لاکھ ہے۔4436 مربع کلو میٹر میں پھیلے اس ضلع میں 5 اسمبلی حلقے ہیں۔یہاں کے پارلیمانی نمائندے بی جے پی کے ورون گاندھی ہیں۔یہ ضلع کئی اہم ہستیوں کا آبائی وطن رہا ہے جن میں مجروح سلطان پوری۔رما شنکر یادو دروہی۔ترلوچن شاستری اور رام نریش ترپاٹھی شامل ہیں۔لوگوں کا یہ بھی دعوی ہے کہ یہاں پر سیتا بھی آئی تھیں اور ان کے نام کا سیتا گھاٹ اب بھی موجود ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot