Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, May 25, 2019

سعودی حکومت کا صہیونی کھیل۔!!!علماء حق کو پھانسی پر چڑھانے کی کوششیں۔

از/ سمیع اللہ خان/ صدائے وقت۔
. . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . . 
دل دہلا دینے والی تازہ ترین اطلاعات یہ ہیں کہ سعودی حکومت بعد از رمضان عالم اسلام کے ۳ ربانی علمائے کرام، " فضیلۃ الشیخ د. سلمان العودہ " علامہ عوض القرنی " اور " علی العمری " حفظھم الله کو پھانسی پر چڑھانے کی تیاری کررہاہے، یہ تینوں حضرات ان اہل دل علمائے حق میں سے ہیں جنہوں نے اپنی زندگی علوم اسلامیہ کی خدمت میں اور کلمہء اسلام کی سربلندی کے لیے جدوجہد کرتے ہوئے گزار دی، 

جزیرۃ العرب میں اسلام کی روحانی نمائندگی کرنے والے مجاہدانہ صفات کے حامل ہزاروں علما، مشائخ و اولیاء کو موجودہ اسرائیل نواز سعودی حکومت نے سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے، جن کا جرم صرف اسقدر ہےکہ انہوں نے پورے خطۂ عرب میں مجاہدین کی تائید کی، فلسطینی کاز پر اسلامی حمیت کا کردار ادا کیا اور سعودی عرب میں " معتدل اسلام " کے نام پر قرآن و سنت اور شریعت میں تحریف کرنے والے حکمرانوں کو آئینہ دکھایا، شاہ سلمان اور اس کا بیٹا محمد بن سلمان اسلام اور انسانیت کی تمام حدیں پار کرکے نہایت ڈھٹائی کے ساتھ صہیونی گود میں کھیل رہےہیں، اہل الله سے ان کی دشمنی اب پورے شباب پر آچکی ہے، چنانچہ ان بزرگ اور اسلام پسند علمائے کرام کو جیلوں میں ٹھونس کر ان پر ظلم و ستم کرنے سے ان لوگوں کا جی نہيں بھرا، جیلوں میں ان مشائخ کا بظاہر سسکیوں میں ڈوبا وجود بھی ان شیطانوں کو خوف میں مبتلا کررہا ہے، اور اسی لیے " رمضان المبارک " کے بعد ۳ عظیم علما کو پھانسی دینے کی تیاری سعودی حکومت نے شروع کردی ہے، اس خبر کو عرب اور خلیجی میڈیا کے معتبر ستونوں نے کور کیا ہے، جس میں نمایاں نام، " MiddleEast Eye " " الجزیرہ " "القدس ڈاٹ " اور "‍ فیصل القاسم " کے ہیں، اگر رمضان بعد ایسا کوئی ظالمانہ قدم اٹھتا ہے تو یقینًا اس ظلم کی نحوست ظالموں کے گریبان کو پہنچ کر رہے گی، جو لوگ ایسے صریح مظالم پر بھی خاموش رہیں گے تاکہ سعودی حکومت سے وابستہ ان کے مفادات میں کمی نا آئے تو بخدا، اُن کا انجام بھی بدترین ہی ہوگا ایسے لوگوں کے بارے میں قرآن کہتا ہے، " ولا ترکنوا الی الذین ظلموا فتمسکم النار " ظالموں کی طرف میلان بھی رکھنے والے کو ہم جہنم میں پھینک دینگے، پوری دنیا کے مسلمانوں اور ان کے رہنماﺅں کے لیے ابھی بھی وقت ہےکہ عبرت حاصل کریں اور اسلام و مسلمانوں کے مرکزی و روحانی قلب، یعنی کہ جزیرۃ العرب میں جاری صہیونی مظالم پر آواز اٹھائیں، کیونکہ آج نہیں تو کل ہمیں اسی مرکز کی طرف پلٹنا ہے، لیکن وہاں تک وہی لوگ الله کی نظر میں شادکام جائیں گے جنہوں نے فریضۂ احقاق حق ادا کیا ہوگا، مصلحت و مفاد پرست، اپنی اپنی جان مال اور اہل و عیال کے پرستاروں کو وہاں کوئی جگہ نہیں ملے گی، یہ قرآن کا فیصلہ ہے، یہ رسولﷺ کی زبان میں کہا گیاہے انبیاء سے لیکر موجودہ امت کی چودہ سو سالہ تاریخ اس پر آئینے کی طرح گواہ ہے، یہ سنت الله ہے اس کی تبدیلی کا کوئی چانس ہی نہیں، قبل اس کے کہ یہی گردش میں آجائے، ہوش کے ناخن لیجیے اور عالم اسلام کے عالمی " اُمّت پنے " کو زندہ کیجیے_

اسوقت سعودی عرب، تاریخ اسلام میں اپنا بدترین کردار پيش کررہاہے، اب یہ بات ڈھکی چھپی نہیں رہی ہے کہ آل سعود اور آل نہیان نے جزیرۃ العرب کا صہیونی کرن کیا ہے، بظاہر اسلامی خدمات اور بباطن اسرائیل نواز ایجنڈے پر کام کرنے والے ان دونوں حکمران گھرانوں نے ایک طرح سے جزیرۃ العرب کو مشرکین یہودونصاریٰ کے ہاتھوں بیچ دیا ہے، قبلۂ اول اور فلسطینی کاز کو نقصان پہنچانے والے اور جزیرۃ العرب کے بے لوث مجاہدین " اخوان المسلمین " پر امریکی و عالمی صہیونی طاقتوں سے حملہ کروانے والے یہی آل سعود و آل نہیان ہیں، اور اب مسلسل پورے جزیرۃ العرب کو صہیونی رنگ میں رنگنے کی ریشہ دوانیاں ہو رہی ہیں،
*ایکطرف لاؤ لشکر، طاقت و سلطنت، اور جدید ٹکنالوجی سے لیس شیطانی دستہ ہے دوسری طرف ارض حرمین کی ناموس ہے، تیسری طرف اس ناموس کے متوالے علمائے حق سعوديه کے جیلوں میں اذیتوں میں جھونکے جارہےہیں اور کچھ پھانسی پر چڑھائے جارہےہیں، چوتھی طرف پورے دنیا کے کروڑوں مسلمان ہیں، لیکن ان کے تالو ان کی سیکولر زندگی سے چمٹ گئے ہیں اور ان کے حلق زندہ رہنے کے خوف میں خشک ہیں، لیکن الله کی مدد ضرور آئے گی، میرے اور آپکے وہم و گمان سے پرے آئے گی*
شیخ سلمان العودہ، عوض القرنی اور دکتور علی العمری کے متعلق پھانسی کی اس خبر نے وجود کو لرزا دیا ہے، یہ بہت ہی غم انگیز خبر ہے پورے عالم اسلام کے لیے_
*سمیع اللّٰہ خان*
۱۷، رمضان المبارک، 1440 ھجری
ksamikhann@gmail.com

Post Top Ad

Your Ad Spot