Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, June 28, 2019

ماب لنچنگ ۔۔۔۔۔مدھییہ پردیش، کولکاتہ، اور گجرات میں نفرت کی لہر!!


لنچنگ کی چار وارداتیں، مسلم بزرگ کے ہاتھ پیر توڑ دئیے ۔
گجرات میں ایک نوجوان کو ننگا کرکے پیٹا، ۔
کولکاتہ میں جے شری رام نہ کہنے پر تین لوگوں کو ٹرین سے ڈھکیل دیا، ۔
اجین میں نوجوان کو صرف اس لیے مارا کہ وہ مسلمان تھا ۔
ممبئی۔۲۸؍جون:صداٸے وقت/ ذراٸع۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ملک میں ماب لنچنگ کا معاملہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے ، ان وحشیانہ قتل کی وارداتوں پر پوری دنیا کی نظریں ہیں۔ حال ہی میں ایک امریکی تنظیم نے رپورٹ جاری کرکے حکومت ہند سے ان واقعات کو روکنے کا مطالبہ کیا تھا لیکن ہجومی دہشت گردوں کی دہشت گردی روز بروز بڑھتی جارہی ہے ۔ ایک طرف جہاں جھارکھنڈ کے تبریز انصاری کے وحشیانہ قتل پورا ملک سراپا احتجاج ہے وہیں مغربی بنگال، گجرات اور مدھیہ پردیش میں ماب لنچنگ کی تازہ وارداتیں رونما ہوئی ہیں۔ اطلاع کے مطابق مغربی بنگال کے ۲۴ پرگنہ ضلع میں منگل کو ۳ افراد کو چلتی ٹرین سے ’جے شری رام‘ نہ کہنے پر ڈھکیل دیاگیا۔ منان ملا چھ افراد کے ہمراہ کاننگ سے ہگلی جارہے تھے کہ ایک گروپ ڈبے میں داخل ہوا اور ’جے شری رام‘ کا نعرہ لگانے پر مجبور کرنے لگا او رپٹائی شروع کردی۔ ملّا نے کہا کہ وہ نعرہ لگاناچاہتا تھا پر شدید پٹائی کی وجہ سے نعرہ نہیں لگا سکا اور اسے اور اس کے ساتھ مزید لوگوں کو ٹرین سے نیچے ڈھکیل دیاگیا۔ اس سے قبل محمد مومن کے ساتھ مغربی بنگال میں یہی ہوا تھا۔ گجرات میں ایک نوجوان کو بری طرح سے مارا پیٹا گیا جس کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہا ہے، میڈیا رپورٹ کے مطابق گجرات کے داہوڈضلع کے فتح پور تحصیل میں ایک شادی شدہ نوجوان اور لڑکی کے درمیان محبت کا شک ہونے پر گائوں والوں نے نوجوان کو ننگا کرکے پیٹنا شروع کردیا۔ جب نوجوان کو پیٹا جارہا تھا تو وہاں پر سینکڑوں لوگ کھڑے ہوکر تماشہ دیکھ رہے تھے۔ اطلاع کے مطابق جب گائوں میں ان دونوں کے بھاگنے کی خبر پھیلی او ردونوں کے درمیان محبت کا پتہ چلا تو گائوں والوں نے ا نہیں ڈھونڈنا شروع کردیا ۔ طویل تلاش وجستجو کے بعد گائوں والوں نے انہیں ڈھونڈ لیا اور گائوں کے بیچ چوراہےپر دونوں کو بری طرح سے پیٹا۔ پٹائی کے دوران پورا گائوں وہاں موجود تھا اتنا ہی نہیں دونوں کے گھر والے بھی وہاں موجود تھے لیکن کسی نے بھی ان دونوں کو بچانے کی کوشش نہیں کی۔ نوجوان کے سارے کپڑے اتار دئے گئے،اور بیچ چوراہے پر ننگا کرکے پیٹا گیا۔ اس دوران وہاں پر کھڑے لوگ ویڈیو گرافی کرتے رہے ویڈیو کے وائرل ہونے کے بعد پولس نے کارروائی کی اور لڑکا لڑکی کو ریسکیو کیاگیا۔ معاملے میں اب تک ایک کی گرفتاری ہوئی ہے۔ مدھیہ پردیش حکومت نے کل ہی اعلان کیا تھا کہ یہاں گئو رکشکوں پر لگام کسے جائیں گے اور لنچنگ کرنے والوں کے خلاف قانون بنایاجائے گا اس اعلان کو چند گھنٹے ہی گزرے ہوں گے کہ آج صبح سات بجے مدھیہ پردیش میں دو وارداتیں رونما ہوئیں ایک میں بزرگ شخص کو بلا وجہ اتنا مارا گیا کہ ان کے ہاتھ پیر ٹوٹ گئے دوسرے واقعے میں ایک نوجوان کو ہندوئوں نے محض اس لیے مارا کہ وہ مسلم تھا۔ مدھیہ پردیش کے رائی سین ضلع کے ادئے پور سے موصولہ خبر کے مطابق بجنہائی گائوں کے رہنے والے ایک مسلم بزرگ کو جو روڈ پر کھڑے ہوکر بس کا انتظار کررہے تھے  گائوں کے ہی رہنے والے راجیش شرما نے بلاوجہ ڈنڈے سے بری طرح مارا ، اتنا مارا کہ ان کے ہاتھ پیر تک ٹوٹ گئے۔بتایاجارہا ہے کہ راجیش شرما نے اچانک ان پر ڈنڈے سے حملہ کردیا جس سے بزرگ کے دونوں پیر ٹوٹ گئے او روہ مفلوج ہوگئے۔ بزرگ کو لہولہان کرنے کے بعد دہشت گرد راجیش موقع سے فرار ہوگیا۔ وہاں سے گزر رہے راہ گیروں نے بزرگ کی مدد کی اور ۱۰۰ نمبر ڈائل کرکےادئے پور اسپتال پہنچایا گیا جہاں سے انہیں رائے سین ریفر کردیاگیا ۔ فی الحال ان کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔ دوسرے واقعے میں اجین شہر کے اندرا نگر میں ایک نوجوان کو صرف اس لیے خوب  مارا پیٹا گیا کہ وہ مسلم تھا اور اس سے جبراً ہندوئوں کے مذہبی نعرے لگوائے گئے۔ واقعے کے بعد مسلمانوںنے چمن  گنج منڈی تھانے پہنچ کر انصاف کا مطالبہ کیا۔

Post Top Ad

Your Ad Spot