Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, January 13, 2020

دہلی میں سرکاری زمین پر موجود سبھی مساجد کا ٹوٹنا طے:::::: بی جے پی رکن پارلیمنٹ پرویش ورم

نٸی دہلی۔۔۔۔صداٸے وقت ،13/جنوری 2020 (ایچ یو ٹی/ایجنسی) .
=============================
دہلی میں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہونے کے بعد سیاسی پارٹیوں کی انتخابی تشہیر تیز ہو گئی ہے۔ لیکن اس درمیان بی جے پی کے کئی لیڈران نے مسلمانوں کے خلاف زہر افشانی شروع کر دی ہے۔ تازہ بیان مغربی دہلی کے بی جے پی رکن پارلیمنٹ پرویش ورما نے دیا ہے جس میں انھوں نے کہا ہے کہ سرکاری زمین پر بنی ہوئی مساجد کا ٹوٹنا طے ہے۔ بی جے پی رکن پارلیمنٹ کے اس بیان کو ووٹوں کے پولرائزیشن سے جوڑ کر دیکھا جا رہا ہے۔
دراصل پرویش ورما دہلی واقع بی جے پی دفتر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ اس پریس کانفرنس میں انھوں نے مساجد کو منہدم کیے جانے سے متعلق بیان دیا اور پھر دہلی کی عآپ حکومت کے خلاف بھی کئی طرح کے بیان دیے۔ دہلی اسمبلی انتخاب کے مقصد سے منعقد پریس کانفرنس میں وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کو پوری طرح سے ناکام قرار دے کر اور پھر مساجد کے تعلق سے زہر انگیز بیان دے کر انھوں نے ہندو ووٹروں کو پولرائز کرنے کی کوشش کی ہے۔ حالانکہ پہلے بھی وہ سرکاری زمین پر موجود مساجد توڑنے کو لے کر بیان دے چکے ہیں۔

گزشتہ سال جون میں پرویش ورما نے دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر کو ایک خط لکھا تھا جس میں انھوں نے الزام عائد کیا تھا کہ ملک کی راجدھانی دہلی میں کئی مساجد کی تعمیر سرکاری زمین پر غیر قانونی طریقے سے کی گئی ہے۔ بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے مطالبہ کیا تھا کہ ایسی مساجد کو سرکاری زمین سے ہٹایا جائے۔ حالانکہ دہلی اقلیتی کمیشن نے پرویش ورما کے ان الزامات کو سرے سے خارج کر دیا تھا اور کہا تھا کہ ان کے دعوے میں ذرا بھی سچائی نہیں ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot