Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, January 24, 2020

سی اے اے کے خلاف احتجاجیوں کو وی ایچ پی کی دھمکی.

نئی دہلی..صداٸے وقت /ذراٸع  ،24جنوری ۔2020.
==============================
وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی )نے شہریت (ترمیمی )قانون کے خلاف احتجاج کی آڑ میں مبینہ تشددکی سخت مذمت کرتے ہوئے جمعہ کو متنبہ کیا کہ اس قانون کے خلاف احتجاج کے بہانے ہندؤوں پر حملے نہیں رکے تو سماج کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوسکتاہے
وی ایچ پی کے بین الاقوامی سکریٹری جنرل ملند پرانڈے نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں کہاکہ’’ شہریت ترمیمی قانون کے خلاف کیے جارہے مبینہ احتجاج کی آڑمیں پرتشددوارداتیں ملک بھر میں ہورہی ہیں ،جو اب ناقابل برداشت بنتی جارہی ہیں ۔‘‘
انھوں نے کہاکہ’’ جھارکھنڈ کے لوہر دگا جیسے علاقوں میں ہندوؤں پر سرے عام جان لیواحملے ہورہے ہیں ،راج دھانی دہلی بھی تشددسے نہیں بچی ۔ان مبینہ مظاہروں کی وجہ سے دہلی میں جگہ جگہ لاکھوں لوگوں کے ذریعہ اہم سڑکوں اور پارکوں پر غیر قانونی طریقہ سے نہ صرف قبضے ہورہے ہیں بلکہ مسلم اکثریتی علاقوں میں غیر مسلموں کا جینا مشکل ہوگیاہے ۔‘‘
انھوں نے یہ بھی کہاکہ جس قانون کا کسی بھی ہندستانی کمیونٹی کی شہریت سے کوئی لینا دینا ہی نہیں ہے ،اس کے نام پر کانگریس سمیت کچھ دیگر اقلیتوں کی نازبرداری کرنے والی سیاسی پارٹیاں اور ہندمخالف طاقتیں عوام کو گمراہ کرنے کا ایک خطرناک کھیل کھیل رہی ہیں جسے بلاتاخیر روک کر انکے خلاف سخت کارروائی کرنا انتہائی ضروری ہے ۔اگر یہ تشددنہیں رکا تو ہندو سماج کے صبر ٹو ٹ جائیگا۔

مسٹر پرانڈے نے دہلی کے شاہین باغ اور خوریجی کا ذکر کرتے ہوئے کہاکہ’’ ایک طرف شاہین باغ میں پچھلے سواماہ سے اترپردیش سے جوڑنے والی اہم شاہراہ کو روک کر وہاں ہندوؤں اور ملک کے خلاف نعرے لگاکر لوگوں کو اکسا یاجارہاہے تو خوریجی کے ویویکا نند آشرم پر پتھراؤ کےساتھ اسکے آس پاس ڈی ڈی اے پارک کی سرکاری زمین پر رازدارانہ طریقہ سے مسجد کی تعمیر کا کا م کیاجارہاہے ۔اسے جلد ازجلدروکا جانا انتہائی ضروری ہے ۔

Post Top Ad

Your Ad Spot