Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, February 8, 2020

شاہین باغ میں امڑی رائے دہندگان کی بھیڑ ،اب تک 15فیصد پولنگ۔

نئی دہلی/،صداٸے وقت۔ /ذراٸع۔( 8فروری 2020)۔
=============================
 دہلی میں آج  اسمبلی انتخابات کے لئے پولنگ کا آغاز کچھ سست رہا اور ابتدائی دو گھنٹوں (10 بجے تک) تک 4.33 فیصد پولنگ ہوئی۔ دہلی میں صبح ہلکی سردی کی وجہ سے پولنگ مراکز میں رائے دہندگان کی تعداد کم دیکھی گئی ۔ اس دوران سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ ، وزیر خارجہ ایس جئے شنکر ، دہلی میں وزیر اعلی ارود کیجریوال، چیف سیکریٹری وجے کمار دیو، سابق نائب صدر حامد انصاری کے علاوہ کئی دیگر لیڈروں نے ووٹ ڈالا ۔ وزیر خارجہ جئے شنکر نے تغلق کریسنٹ کے این ڈی ایم سی اسکول میں ووٹ ڈالا ۔ کیجریوال نے سول لائینز علاقے میں ووٹ ڈالا ۔
 مسٹر دیو نے بھی اپنے حقِ رائے دہی کا استعمال کیا اور سابق صدر حامد انصاری نے نریمان بھون کے پاس پولنگ مرکز میں ووٹ ڈالا ۔ اس دوران دہلی کے لکشمی نگر میں ایک دولہا نے شادی کی تقریب میں جانے سے قبل ووٹ ڈالا ۔ دارالحکومت کے یمنا وہار سمیت دیگر کئی علاقوں میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) میں تکنیکی خرابی آنے کی وجہ سے پولنگ تاخیر سے شروع ہوئی ۔
 شاہین باغ میں بھی پولنگ پرُامن طریقے سے ہو رہی ہے اور وہاں اس کے لئے سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں ۔واضح رہے دہلی کے سبھی 70اسمبلی سیٹوں پر پرامن طریقے سے ووٹنگ جاری ہے  واضح رہے شاہین باغ علاقہ شہریت ترمیمی قانون کے خلاف جاری احتجاج کے چلتے لوگوں کےلئے بحث کا موضوع بنا ہوا ہے  یہی وجہ ہیکہ شاہین باغ میں ووٹنگ پر لوگوں کی خاص نظر تھی شاہین باغ کے حلقے میں آنے والے سبھی پانچ  پولنگ مراکز پر سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں۔ واضح رہے دلی میں بارہ بجے تک 11فیصد پولنگ ہوچکی ہے

Post Top Ad

Your Ad Spot