Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Saturday, March 7, 2020

: طاہر حسین مسلمان ہونے کی سزا کاٹ رہا ہے ، ۔۔۔۔۔۔۔۔۔امانت اللہ خان

امانت اللہ خان نے ہفتہ کو ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ آج طاہر حسین صرف اس بات کی سزا کاٹ رہے ہیں کہ وہ ایک مسلمان ہے۔ شاید آج ہندوستان میں سب سے بڑا گناہ مسلم ہونا ہے اور یہ بھی ہو سکتا ہے کہ آنے والے وقت میں یہ ثابت کر دیا جائے کہ دہلی میں تشدد طاہر حسین نے کرائے ہیں۔

نٸی دہلی /صداٸے وقت / ذراٸع / 7 مارچ 2020.
==============================
عام آدمی پارٹی کے ممبر اسمبلی اور دہلی وقف بورڈ کے چیئرمین امانت اللہ خان نے شمال مشرقی دہلی فسادات کے ایک ملزم طاہر حسین کے سلسلے میں ایک بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ (طاہر) مسلم ہونے کی سزا بھگت رہے ہیں ۔ امانت اللہ کے اس بیان کو لے کر کرکٹر سے سیاستداں بنے گوتم گمبھیر نے عام آدمی پارٹی پر نشانہ سادھا ہے ۔
               امانت اللہ خان
قابل ذکر ہے کہ امانت اللہ خان نے ہفتہ کو ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ آج طاہر حسین صرف اس بات کی سزا کاٹ رہے ہیں کہ وہ ایک مسلمان ہے۔ شاید آج ہندوستان میں سب سے بڑا گناہ مسلم ہونا ہے اور یہ بھی ہو سکتا ہے کہ آنے والے وقت میں یہ ثابت کر دیا جائے کہ دہلی میں تشدد طاہر حسین نے کرائے ہیں۔
امانت اللہ کے اس متنازع ٹویٹ کے بعد گوتم گمبھیر نے عام آدمی پارتی پر نشانہ سادھا ہے ۔ گمبھیر نے امانت اللہ کے ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ سندر کانڈ کا درس دینے چلے اور کچھ سندر نہ رہا ... تاہم منصوبہ بند سانحہ ضرور ہوا ۔ ملک کا تحفظ کرنے والے انکت شرما پر 400 وار کئے گئے ، جس کا الزام طاہر پر ہے اور اپنی زبان سے ملک کو تقسیم اور مذہب پر وار کرنے کا کام آپ کے ممبر اسمبلی کررہے ہیں ۔ سوال آپ کی نیت پر ہے !۔ گمبھیر نے کیجریوال کو بھی اس میں ٹیگ کیا ہے ۔
خیال رہے کہ شہریت (ترمیمی) قانون (سی اے اے) کے معاملہ  پر گزشتہ ہفتہ شمال مشرقی دہلی کے کئی علاقوں میں فسادات ہوئے تھے ، جس میں 53 لوگوں کی موت ہوئی تھی۔ اے اے پی کے نہرو وہار وارڈ سے معطل کونسلر طاہر حسین کو ان فسادات کے سلسلے میں دہلی پولیس کی کرائم برانچ نے جمعرات کو گرفتار کیا تھا اور وہ اس وقت سات دن کی پولیس حراست میں ہیں۔

Post Top Ad

Your Ad Spot