Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Sunday, March 29, 2020

افواہوں پر دھیان نہ دیں ۔ہوا سے نہیں پھیل سکتا کورونا وائرس۔ڈبلو ایچ او ۔

صداٸے وقت /ذراٸع / ٢٩ مارچ ٢٠٢٠۔
==============================
کورونا وائرس پوری دنیا میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔ ایسی صورتحال میں ، سماجی دوری کرنے کو کہا جارہا ہے ، جس کی وجہ سے لاک ڈاؤن بھی ہوچکا ہے۔ جانکاری بھی دی جارہی ہے ، لیکن ساتھ ہی ساتھ کئی طرح کی افواہیں بھی پھیل رہی ہیں۔ ایسی ہی ایک افواہ یہ ہے کہ کورونا وائرس ہوا کے ذریعے پھیلتا ہے ، جس کی عالمی ادارہ صحت نے تردید کی ہےورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے واضح کیا ہے کہ کورونا وائرس صرف ایک متاثرہ شخص کے ساتھ رابطے کے ذریعہ پھیلتا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کا انفیکشن ہوا کے ذریعے نہیں پھیلتا ہے ، کیونکہ یہ صرف تھوک کے ذرات ہی سے پھیلتا ہے۔ یہ ذرات بلغم ، چھینکنے اور بولنے کی وجہ سے جسم سے باہر آجاتے ہیں۔ تھوکنے والے ذرات اتنے ہلکے نہیں ہیں جو ہوا کے ساتھ یہاں سے اڑ سکتے ہیں۔ وہ بہت جلد زمین پر گر پڑتے ہیں۔ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے مطابق ، اگر کوئی متاثرہ شخص کے ایک میٹر کے اندر کھڑا ہے تو ، کورونا وائرس سانس کے ذریعے اس کے جسم میں جاسکتا ہے۔ اگر کسی متاثرہ شخص کے تھوک کے ذرات کسی سطح پر گر چکے ہیں اور اگر کوئی شخص اس سطح کو چھو کر اپنی آنکھ ، ناک یا منہ کو چھوتا ہے تو یہ وائرس اس کے ہاتھ سے جسم میں داخل ہوسکتا ہے۔ 
ایسی صورتحال میں مسلسل ہاتھ دھونے ضروری ہیں۔کورونا وائرس پھیلنے کا عمل پوری دنیا میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔ اب تک ، دنیا بھر میں 6.50 لاکھ سے زیادہ افراد انفکشن ہوچکے ہیں اور 30 ​​ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ صرف ہندوستان میں ، کورونا انفیکشن کی تعداد 1000 کے قریب پہنچ چکی ہے اور 20 افراد کی موت بھی ہوئی ہے۔ دنیا بھر کی حکومتیں تحفظ کے لئے تمام اقدامات کررہی ہیں۔ لاک ڈاؤن بھارت میں بھی ہوچکا ہے۔لیکن لوگ ابھی بھی باز نہیں آرہے ۔غلط افواہوں پر تو دھیان دے رہے ہیں پر حکومت کے ذرئے دی گئی ہدایات پر عمل نہیں کر رہے

Post Top Ad

Your Ad Spot