Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Tuesday, March 3, 2020

دہلی تشدد کو لے کر وزیر اعلی کیجریوال نے کی وزیر اعظم مودی سے ملاقات ،کانگریس نے کی تنقید۔

وزیر اعلی کیجریوال نے پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں وزیر اعظم مودی سے ملاقات کرنے کے بعد کہا کہ گزشتہ دنوں دہلی میں ہوئے پر تشدد واقعات پر ان کی وزیر اعظم مودی سے سنجیدہ بات چیت ہوئی ہے ۔

نٸی دہلی /صداٸے وقت /ذراٸع /٣ مارچ ٢٠٢٠۔
=============================
دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال نے وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کرکے دہلی میں ہوئے تشدد کے ساتھ ہی قومی راجدھانی کی ترقی اورکرونا وائرس کے خطروں سے نمٹنے کے سلسلے میں بات چیت کی ۔ وزیر اعلی کیجریوال نے پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں وزیر اعظم مودی سے ملاقات کرنے کے بعد منگل کو نامہ نگاروں سے کہا کہ گزشتہ دنوں دہلی میں ہوئے پر تشدد واقعات پر ان کی وزیر اعظم مودی سے سنجیدہ بات چیت ہوئی ہے ۔ انہوں نے وزیراعظم سے اپیل کی ہے کہ مستقبل میں راجدھانی میں اس طرح کے واقعات نہ ہوں۔ وزیر اعظم مودی نے ان کی اس درخواست پر اپنی رضامندی کا اظہار کیا ہے ۔ کیجریوال نے وزیراعظم سے تشدد کے قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اتوار کی شام کو دہلی میں ہوئے تشدد کے سلسلے جس قسم کی افواہیں پھیلائی گئی ہیں ، وہ تکلیف دہ ہیں ۔ لیکن اس پر دہلی پولس کی جانب سے جس طرح ردعمل سامنے آیا وہ قابل تعریف ہے ۔ کیجریوال نے بتایا کہ کرونا وائرس کے خطروں سے نمٹنے کے لئے بھی وزیراعظم سے بات چیت ہوئی ، کیونکہ دہلی میں اس کا ایک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ علاوہ ازیں  انہوں نے دہلی میں پانچ سالہ ترقی کے لئے پی ایم مودی سے تعاون کا مطالبہ کیا ، جس پر وزیراعظم نے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی۔
ادھر کانگریس نے وزیر اعظم مودی اور اروند کیجریوال کے درمیان ملاقات کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی میٹنگ کے بعد کیجریوال کے بیان سے واضح ہوتا ہے کہ انہوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں اور یہ راز جلد از جلد فاش ہونا چاہئے۔ کانگریس کے ترجمان ابھیشیک منو سنگھوی نے کہا کہ پی ایم مودی سے ملاقات کے بعد کیجریوال مسرورتھے ، یہ افسوسناک اور تعجب خیز صورتحال تھی ۔ یہ ایک طرح کا راز تھا ، جس سے واضح ہوتا ہے کہ کیجریوال نے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں اور ان کی بدلی ہوئی صورتحال کی حقیقت سب کے سامنے آنی چاہئے۔
انہوں نے کہا کہ یہ تعجب کی بات ہے کہ وزیر اعظم مودی سے ملاقات کے دوران وزیر اعلیٰ نے دہلی فسادات کے دوران 50 افراد کے اموات کے سلسلے میں کوئی بات نہیں کی ۔ انہوں نے وزیر اعظم مودی سے یہ بھی نہیں پوچھا کہ جو لوگ نفرت پھیلا رہے تھے ان کے خلاف کیا کارروائی کی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان دوستی کا یہ نیا رنگ حیران کن ہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot