Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, April 24, 2020

رمضان المبارک 2020: تراویح سے پہلے مسجد الحرام سمیت خانہ کعبہ کو کیاگیاسینٹایز ۔ ‏

سعودی عرب کے مفتیِ اعظم نے نماز تراویح اور عیدالفطر کی نماز گھروں میں ادا کرنے کی ہدایت کی ہے۔
صداٸے وقت /ذراٸع /٢٣ اپریل ٢٠٢٠
=============================
سعودی حکومت نے رمضان المبارک کے آغاز کے ساتھ ہی مسجد الحرام کے مطاف اور مسجد نبوی ؐ کو کورونا وائرس کے انفکیشن پر قابو پانے کے مقصد سے صفائی کروائی ہے ۔یادرہے کہ گزشتہ رات سے مسجد الحرام اور مسجد نبوی ؐ میں تروایح کی نماز ادا کی جارہی ہے ۔ تاہم اب بھی عوامی داخلے پر پابندی قرار ہے۔۔
خلیجی نیوز اور سعودی عرب کے نجی نیوز چینلز کے مطابق لاک ڈاؤن کی وجے سے خانہ کعبہ سے متصل صحن کو لاک ڈاؤ ن کے سبب پہلی ہی بند کردیاگیاتھا۔۔سعودی عرب کے مقدس شہر مکہ کی مسجد الحرام میں رمضان المبارک کےآغاز کے بعد تراویح سے پہلے کورونا وائرس کی وباء پر قابو پانے کے مقصد سے کارکنان نے بیت اللہ کو صاف کرکے جراثیم کش دواء کا چھڑ کاؤ کیاگیا۔ گزشتہ رات سے تراویح سے پہلے مسجد الحرام اور مسجد نبویؐ کے احاطہ کو سینٹایز کیاگیاہے۔ سعودی عرب حکومت کی جانب سے دونوں مقدس مساجد میں آنے والے مصیلوں کی حفاظت کو دیکھتے ہوئے احتیاطی اقدامات کیے تھے۔۔۔
سعودی عرب سمیت سبھی خلیجی ممالک میں رمضان المبارک کے مقدس مہینہ کا آغاز ہوگیا ۔ تاہم اس مرتبہ حرمین شریفین میں 20 رکعت کی بجائے صرف 10 رکعت نماز تراویح ادا کی جارہی ہے ۔
علاوہ ازیں سال رواں حرمین شریفین میں اجتماعی افطار کا ابھی بندوبست نہیں کیا جارہاہے۔دونوں مقدس مساجد میں اعتکاف کی اجازت نہیں بھی ہوگی ۔حرمین شریفین میں تراویح کی 10 رکعت ادا کرنے کو شاہ سلمان نے منظوری دیدی ہے 
العربیہ ڈاٹ نیٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق الحرمین الشریفین کی جنرل پریذیڈینسی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں عام عبادت گزاروں کے داخلے پر پابندی برقرار رہے گی۔۔پریزیڈینسی کے صدر ڈاکٹر شیخ ڈاکٹر عبدالرحمان بن عبدالعزیز السدیس کے حوالے سے رپورٹ میں یہ بھی یہ بتایا گیا ہے کہ حرمین شریفین میں اجتماعی نمازتراویح ادا کی جائے گی ۔مگر دونوں مساجد میں اتھارٹی کے ملازمین اور ورکرس ہی نماز تراویح ادا کرسکیں گے ۔ یہ پانچ تسلیمات تک محدود ہوں گی ۔ دو دو رکعت ادا کی جائیں گی ۔ یعنی صرف دس رکعت نمازادا کی جائیں گی۔
خیال رہے کہ سعودی عرب میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اقدامات کے تحت مساجد میں پنج وقتہ باجماعت نماز پر پابندی عاید ہے ۔ سعودی عرب کے مفتیِ اعظم نے نماز تراویح اور عیدالفطر کی نماز گھروں میں ادا کرنے کی ہدایت کی ہے۔ علاوہ ازیں سعودی حکومت نے رمضان کے پیش نظر کرفیو کے اوقات پر بھی نظرثانی کی ہے اور اب شہریوں کو صبح نو بجے سے شام پانچ بجے تک ضروری کاموں اور ضروریات زندگی کی خریداری کے لیے گھروں سے باہر جانے کی اجازت ہوگی۔

Post Top Ad

Your Ad Spot