Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Wednesday, April 22, 2020

انڈیا ‏نے ‏چینی ‏ساختہ ‏ریپڈ ‏ٹسٹ ‏کٹس ‏پر ‏دو ‏روز ‏کے ‏لٸیے ‏لگاٸی ‏روک۔نتیجہ ‏کے ‏ناقص ‏ہونے ‏کا ‏شک۔

انڈیا نے چین سے دس لاکھ ریپڈ ٹسٹ کٹس منگواٸی تھی۔

صداٸے وقت /ذراٸع /٢٢ اپریل ٢٠٢٠

==============================

انڈیا میں طبّی تحقیق کے مرکزی ادارے نے ریاستوں سے کہا ہے کہ وہ کورونا وائرس کی تشخیص کے لیے ریپڈ ٹیسٹ کرنے والی کٹس کو استعمال نہ کریں۔ ادارے نے یہ حکم اس خدشے کے پیش نظر دیا ہے کہ یہ کٹس ناقص ہو سکتی ہیں۔


بہت سی ریاستوں نے یہ شکایت کی تھی کہ وہ کٹس جو کورونا وائرس سے متعلق جسم میں موجود اینٹی باڈیز کی موجودگی کا پتہ لگاتی ہیں صحیح طور پر کام نہیں کر رہیں۔


انڈیا کے علاوہ دیگر بہت سے ممالک نے بھی چین سے برآمد کردہ ٹیسٹنگ کٹس کے استعمال کے حوالے سے مسائل سے آگاہ کیا ہے لیکن بیجنگ نے ان کٹس کے معیار کے حوالے سے ان تحفظات کو مسترد کر دیا ہے۔گذشتہ ہفتے چین نے ایک بیان میں کہا تھا کہ وہ طبّی آلات کی برآمد بہت زیادہ اہمیت دیتا ہے۔لیکن دوسری جانب انڈیا کی کم از کم تین ریاستوں نے چینی کِٹس پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ ان میں شمالی ریاست راجھستان بھی شامل ہے جس نے سرے سے ان اھیں استعمال کرنے سے ہی انکار کر دیا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ چین کی ٹیسٹنگ کِٹس پانچ فیصد درست کام کر رہی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ کورونا کے متاثرین پر ان کا استعمال کیا گیا وہ کورونا کے مصدقہ مریض تھے لیکن ٹیسٹ میں منفی نتیجہ آ رہا تھا۔ اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے انڈیا میں انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ نے تمام ریاستوں سے کہا کہ وہ ابھی فی الحال دو دن کے لیے چینٹی کٹس کا استعمال روک دیں تاکہ اان کا درست طریقے سے معائنہ کیا جا سکے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot