Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Monday, January 4, 2021

تاج محل احاطہ میں ہندوتوا تنظیم نے لہرایا ’بھگوا پرچم‘، 4 افراد گرفتار،

تاج محل کی سیکورٹی میں تعینات نیم فوجی دستہ سی آئی ایس ایف کے جوانوں نے بھگوا پرچم لہرانے والے سبھی افراد کو پکڑ لیا اور انھیں مقامی پولس کے حوالے کر دیا۔

آگرہ۔۔اتر پردیش /صداٸے وقت /ذراٸع /4 جنوری 2021.
==============================
ہندوستان میں فرقہ واریت پھیلانے کی کوششیں دن بہ دن بڑھتی جا رہی ہیں اور آج تاج محل احاطہ کا ماحول بھی خراب کرنے کی کوشش کی گئی۔ میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی اطلاع کے مطابق عالمی شہرت یافتہ سیاحتی مقام تاج محل کے احاطہ میں کچھ ہندوا تنظیم سے جڑے کچھ شرپسند افراد نے بھگوان پرچم لہرایا۔ جب اس بات کی خبر پولس کو ملی تو فوری کارروائی کرتے ہوئے چار لوگوں کو گرفتار کیا گیا۔
تاج گنج تھانہ کے پولس انسپکٹر امیش چندر ترپاٹھی نے بتایا کہ پیر کو تاج محل احاطہ میں ایک مبینہ ہندو تنظیم کے چار اراکین نے بھگوا پرچم لہرایا۔ واقعہ کے بعد وہاں کی سیکورٹی میں تعینات نیم فوجی دستہ سی آئی ایس ایف کے جوانوں نے ان سبھی کو پکڑ لیا اور انھیں مقامی پولس کے حوالے کر دیا۔ امیش چندر ترپاٹھی نے مزید بتایا کہ پولس نے ہندو جاگرن منچ کے ضلع صدر گورو ٹھاکر سمیت چار لوگوں کے خلاف کیس درج کر انھیں گرفتار کر لیا ہے اور اس سلسلے میں آگے کی کارروائی چل رہی ہے۔
قابل ذکر ہے کہ جس وقت تاج محل میں ہندوتوا ذہنیت کے یہ شرپسند افراد بھگوان پرچم لہرا رہے تھے، وہاں موجود لوگوں نے اس کا ویڈیو بنا لیا جو بعد میں سوشل میڈیا پر بھی ڈالا گیا۔ اس ویڈیو میں تاج محل احاطہ میں لگی بنچ پر بیٹھے اور اس کے آس پاس کھڑے کچھ نوجوان اپنی جیب سے بھگوا پرچم نکال کر اسے لہراتے ہوئے دکھائی دیے۔ کچھ ایسی خبریں بھی سامنے آئی ہیں کہ یہ افراد شیوچالیسا کا پاٹھ کرتے ہوئے بھی دیکھے گئے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot