Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Friday, June 4, 2021

ویر بہادر سنگھ پوروانچل یونیورسٹی میں عالمی یوم ماحولیات کے موقع پر "ماحولیاتی تحفظ: تجزیہ اور مستقبل کی حکمت عملی" پر مبنی ایک ویبینار کا انعقاد ‏

جون پور.. اتر پردیش /صدائے وقت /4 جون 2021. 
==============================
ویر بہادر سنگھ پوروانچل یونیورسٹی میں عالمی یوم ماحولیات کے موقع پر "ماحولیاتی تحفظ: تجزیہ اور مستقبل کی حکمت عملی" پر مبنی ایک ویبینار کا انعقاد کیا گیا۔
یونیورسٹی کی وائس چانسلر پروفیسر نرملا ایس موریہ نے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے نوجوانوں سے ماحولیاتی تحفظ کے لئے آگے آنے کی اپیل کی۔ انھوں نے کہا کہ آج جب ملک کورونا بحران سے گزر رہا ہے، تب ماحولیاتی تحفظ اور توازن اور بھی اہم ہوجاتا ہے۔ پروفیسر موریہ نے یونیورسٹی کی جانب سے اس سمت میں ہونے والے کام پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ 5 جون کو یونیورسٹی کیمپس میں بڑے پیمانے پر شجرکاری کی جائے گی۔
ویبینار کے مہمان خصوصی رام منوہر لوہیا اودھ یونیورسٹی ایودھیا کے وائس چانسلر پروفیسر روی شنکر سنگھ نے ماحولیات اور ماحولیات کے مختلف پہلوؤں پر تبادلہ خیال کیا۔ پروفیسر سنگھ نے کہا کہ 21صدی میں ماحولیاتی تحفظ ایک اہم چیلنج کے طور پر ابھر رہا ہے، جس کے لئے ہماری حکومت پوری کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماحولیات کے تحفظ کے لئے لوگوں کو آگے آکر اس کو ایک مہم بنانا ہوگی اور اسے اپنے روزمرہ کے معمولات میں شامل کرنا ہوگا۔ صرف عوامی شعور اور عوامی شراکت کے ذریعہ ماحولیاتی تحفظ اور فروغ کو یقینی بنایا جائے گا اور ہم آئندہ آنے والی نسلوں کو بہتر مستقبل دینے میں کامیاب ہوں گے۔
ڈاکٹر کملیش کمار سنگھ ایڈیشنل ڈائریکٹر محکمہ موسمیات حکومت ہندنئی دہلی نے ماحولیات کے موجودہ چیلنجوں پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا۔ انھوں نے ماحولیاتی عدم توازن کی وجہ سے ہونے والے مختلف قدرتی اثرات اور آفات پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے زراعت اور روزمرہ کی زندگی میں موسمیاتی تبدیلی اور موسمیات کے مطالعہ کو استعمال کرنے کی اہمیت بتائی۔ ڈاکٹر سنگھ نے گرین ہاؤس گیسوں کے بڑھتے ہوئے منفی اثرات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے اضافی آبادی کی وجہ سے خوراک کی ضرورت سے زیادہ پیداوار کی وجہ سے ماحولیاتی عدم توازن کے لئے بلاتفریق کھاد اور کیڑے مار دوائیوں کو بھی ذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے منافع کے لئے قدرت اور ماحول کو نظرانداز کررہے ہیں، جو انتہائی تشویش کی بات ہے۔پروگرام کی نظامت ڈاکٹر نیرج اوستھی اور استقبال پروفیسر دیوراج نے کیا۔

Post Top Ad

Your Ad Spot