Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Sunday, July 4, 2021

پوروانچل ‏یونیورسٽی ‏میں ‏وسیع ‏پیمانے ‏پر ‏شجر ‏کاری ‏مہم ‏کا ‏آغاز۔

جون پور۔۔اتر پردیش ۔۔صدائے وقت ۔۔4 جولاؠی 2021۔
+++++++++++++++++++++++++++++++++++
ویر بہادر سنگھ پوروانچل یونیورسٹی احاطے میں اتوار کے روز وسیع پیمانے پر شجرکاری مہم کا آغاز وائس چانسلر پروفیسر نرملا ایس موریہ نے  پیپل کا پودا لگا کر کیا۔ محکمہ ہائیر ایجوکیشن کی جانب سے یونیورسٹی کو الاٹ کیے گئے 69720 ہدف کے مقابلہ میں یونیورسٹی سے منسلک چار اضلاع میں 59456 پودے لگائے گئے، جن میں 9451 پیپل پلانٹس بھی شامل ہیں۔
 پروگرام کی مہمان خصوصی وائس چانسلر پروفیسر نرملا ایس موریہ نے کہا کہ ہندوستان کی سناتن روایت میں ماحولیات کی عبادت سب سے پہلے کی جاتی ہے اور ہمارے بزرگ انسانوں کو بچانے کیلئے دوائیوں اور پودوں کی سلامتی کی خواہش رکھتے ہیں اور انھیں کی وجہ سے انسانی زندگی محفوظ ہے۔ ماحول کو خالص اور محفوظ رکھنے سے انسانوں اور جانوروں کی زندگی بھی محفوظ رہے گی۔ رجسٹرار مہیندر کمار نے کہا کہ پودے لگانا ماحولیاتی تحفظ کے لئے ایک اہم پہلو ہے، کیونکہ درخت ہی زندگی بخش آکسیجن کا واحد ذریعہ ہیں۔ انسانی زندگی درختوں پر منحصر ہے۔ اگر درخت نہیں ہیں تو پھر زمین پر زندگی خطرے میں پڑ جائے گی۔ این ایس ایس کوآرڈنیٹر ڈاکٹر راکیش کمار یادو نے کہا کہ کسی بھی قوم، معاشرے اور ثقافت کی خوشحالی نہ صرف اپنے باشندوں کی مادی خوشحالی میں مضمر ہے بلکہ وہاں کی ماحولیات پر بھی انحصار کرتی ہے۔ کھیل سیکرٹری ڈاکٹر الوک کمار سنگھ نے کہا کہ صرف اس صورت میں ہی انسانی زندگی زندہ محفوظ رہے گی جب ماحول سبز رہے گا۔اس موقع پر امتحان کنٹرولر وی این سنگھ،اسسٹنٹ رجسٹرار امرت لال، اجیت پرتاپ سنگھ، ببیتا سنگھ، دیپک کمار سنگھ، اسپورٹس کونسل کے سکریٹری ڈاکٹر الوک کمار سنگھ، ڈاکٹر وجے پرتاپ تیواری، ڈاکٹر راہل سنگھ، ڈاکٹر راجیش سنگھ، ڈاکٹر راکیش کمار یادو، ڈاکٹر جگ دیو، ڈاکٹر انصار خان، ڈاکٹر ششی کانت یادو،قیام الدین خان، سروش کمار یادو سمیت دیگر لوگ موجود رہے۔
اسی سلسلے میں انڈین ریڈ کراس سوسائٹی اور آکانشا کمیٹی کے مشترکہ پروگرام میں گود لئے گئے ٹی بی مریضوں کے ذریعے ضلع مجسٹریٹ رہائش پر شجرکاری کی گئی۔
آکانشا کمیٹی کی صدر ڈاکٹر انکتا راج نے کہا کہ درخت ہماری زندگی کو آکسیجن تو دیتے ہی ہیں،ساتھ میں زندگی کو محفوظ اور رکھتے ہوئے حفاظت کرتے ہیں۔انھوں نے احاطے میں شجرکاری کئے گئے پودوں کی زمہ داری لیتے ہوئے لوگوں سے اپیل کیا کہ وہ لوگ بھی پودوں کی زمہ داری لیتے ہوئے اس کی حفاظت اور دیکھ ریکھ کریں۔ریڈکراس سوسائٹی کے سیکریٹری ڈاکٹر منوج وتس نے کا کہ ٹی بی مریضوں کے ہاتھوں سے شجرکاری کرانے سے ان کا حوصلہ افزائی کی گئی۔یہی لوگ بیماری سے نجات حاصل کر ملک اور معاشرے کی ترقی میں اپنا اہم کردار ادا کریں گے۔اس موقع پر ڈاکٹر قمر عباس،امت گپتا،سنتوش سنگھ،روی سنگھ،ایس این سنگھ،راجیو سریواستو،سجنیو سنگھ،سنتوش رستوگی،سشیل اگرہری سمیت دیگر لوگ موجود رہے۔

Post Top Ad

Your Ad Spot