Sada E Waqt

چیف ایڈیٹر۔۔۔۔ڈاکٹر شرف الدین اعظمی۔۔ ایڈیٹر۔۔۔۔۔۔ مولانا سراج ہاشمی۔

Breaking

متفرق

Sunday, December 12, 2021

دارالعلوم دیوبند نے سعودی عرب میں تبلیغی جماعت پر پابندی عائد کیے جانے کی مذمت کی ہے۔

دیوبند. اتر پردیش /صدائے وقت /ذرائع

==================================

  برصغیر کی تاریخی دینی درسگاہ دارالعلوم دیوبند نے سعودی عرب میں تبلیغی جماعت پر پابندی  عائد کیے جانے  کی مذمت کی ہے۔


اپنے بیان میں دارالعلوم دیوبند کے مہتمم و شیخ الحدیث مولانا مفتی ابو القاسم نعمانی نے سعودی حکومت کی جانب سے تبلیغی جماعت پر پابندی عائد کیے جانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جماعت کے بانی  مولانا الیاس  شیخ الہند مولانا محمود حسن کے شاگردوں میں سے تھے۔ انہوں نے تبلیغی جماعت قائم کی جس کے تحت اکابر کی مخلصانہ جدو جہد دینی و عملی اعتبار سے مفید رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جزوی اختلافات کے باوجود جماعت اپنے مشن پر کام کر رہی ہے ، کم و بیش تمام عالم اسلام میں اس کا کام پھیلا ہوا ہے، اس سے وابستہ افراد اور جماعت کے مجموعی مزاج پر شرک و بدعت اور دہشت گردی کا الزام قطعی بے منی اور بے بنیاد ہے۔ دارالعلوم دیوبند اس کی مذمت کرتا ہے اور سعودی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اس سلسلے میں اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے اور تبلیغی جماعت کے خلاف اس قسم کی مہم سے اجتناب کرے۔

خیال رہے کہ کچھ روز پہلے سعودی عرب میں تبلیغی جماعت پر پابندی عائد کردی گئی تھی۔ اس کے علاوہ سعودی عرب کی وزارتِ مذہبی امور نے ائمہ مساجد کو تلقین کی تھی کہ وہ جمعہ کے خطبوں میں تبلیغی جماعت کی بات کریں اور لوگوں کو بتائیں کہ یہ دراصل دہشت گردی کا دروازہ ہیں، 

Post Top Ad

Your Ad Spot